.

امن عمل کے احیا پر غور کے لیے شرم الشیخ میں مصر۔ فلسطین سربراہ ملاقات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

منگل کی سہ پہر شرم الشیخ میں مصری-فلسطینی سربراہی اجلاس منعقد ہوا جس میں امن کی بحالی پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ مصری صدر عبدالفتاح السیسی نے فلسطینی صدر محمود عباس کا شرم الشیخ میں استقبال کیا۔

ملاقات میں مسئلہ فلسطین کے حل کے سلسلے میں ہونے والی کسی بھی پیشرفت پر تبادلہ خیال کیا۔ دونوں رہ نماؤں نے اردن کے ساتھ مل کر خطے کی صورت حال بالخصوص دیر پا امن کے قیام کے لیے مشاورت کا سلسلہ جاری رکھنے پر بھی اتفاق کیا۔

مصر کے ایوان صدر کے ترجمان نے کہا کہ صدر السیسی نے اپنی طرف سے فلسطینی قوم کے نصب العین کی حمایت میں مصری موقف کا اعادہ کیا۔ ترجمان نے نے کہا کہ مصری حکومت فلسطینی قوم کی آزادی کے نصب العین کی حمایت جاری رکھے گا اور اس حوالے سے بین الاقوامی قوانین پر عمل درآمد کرتے ہوئے فلسطینیوں کو آزادی کی منزل سے ہم کنار کرنے اور خطے میں دیر پا امن کے قیام کے لیے جدو جہد جاری رکھے گا۔

اس موقعے پر فلسطینی صدر نے اپنے مصری ہم منصب عبدالفتاح السیسی کی قیادت میں مصر کی مخلصانہ کوششوں ،فلسطینی کاز کی حمایت اور فلسطینی عوام کو فلسطینی کاز کو درپیش مختلف چیلنجوں کا مقابلہ کرنے کے قابل بنانے میں اس قاہرہ کے کردار کی تعریف کی۔ انہوں نے مصر کی طرف سے فلسطینی قوم کے دیرینہ حقوق کے حصول کے لیے ہونے والی کوششوں میں معاونت اور مسئلہ فلسطین کے منصفانہ حل تک پہنچنے کے لیے مساعی پر شکریہ ادا کیا۔

ترجمان نے مزید کہا کہ اجلاس میں غزہ کی پٹی کی تعمیر نو کی کوششوں کا جائزہ لینے کے ساتھ ساتھ تمام داخلی، علاقائی اور بین الاقوامی سطح پر ہونے والی پیش رفت کی روشنی میں فلسطین سے متعلق ہر پیش رفت کا جائزہ لیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں