عراق : مقتدی الصدر اور قآانی کے درمیان حکومتی تشکیل کے اختلاف پر بات چیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عراق میں الصدری گروپ کے سربراہ مقتدی الصدر اور ایرانی پاسداران انقلاب کی القدس فورس کے کمانڈر اسماعیل قآانی کے درمیان ملاقات ہوئی۔

العربیہ اور الحدث نیوز چینلوں کے ذرائع نے منگل کے روز بتایا کہ ملاقات میں حکومت کی تشکیل کے حوالے سے ہم آہنگی گروپ کے اختلافات زیر بحث آئے۔

اس سے قبل قآانی نجف کا دورہ مکمل کر کے عراقی دارالحکومت بغداد پہنچے۔ نجف میں انہوں نے عراقی مسلح گروپوں کی قیادت سے ملاقات کی تھی۔

میڈیا رپورٹوں کے مطابق قآانی نے بغداد میں ملاقات میں ایک اتحاد تشکیل دینے کے معاملے پر تبادلہ خیال کیا جس میں تمام شیعہ سیاسی فریق شامل ہوں۔

العربیہ اور الحدث کے ذرائع نے انکشاف کیا کہ قآانی کا عراق کا دورہ قیس الخزعلی کے ایران کے دورے کے بعد سامنے آیا ہے۔ قآانی کا دورہ تہران کی جانب سے شیعہ قوتوں کے بیچ خلیج کو پاٹنے کی کوشش ہے تا کہ ایک متحدہ محاذ تشکیل دیا جا سکے جو آئندہ عراقی حکومت بنانے کی ذمے داری سنبھالے۔

تاہم الصدری گروپ کے سربراہ مقتدی الصدر "قومی اکثریت" کی حکومت تشکیل دینے کے لیے کوشاں ہیں۔ اس بات کو ہم آہنگی گروپ نے مسترد کر دیا ہے۔

گذشتہ برس 10 اکتوبر کو ہونے والے انتخابات میں الصدری گروپ نے 73 نشستیں حاصل کی تھیں۔ اس کے بعد پروگریس الائنس نے 37 ، اسٹیٹ لاء الائنس نے 33 اور اس کے بعد کردستان ڈیموکریٹک پارٹی نے 31 نشستیں اپنے نام کی تھیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں