یمن اور حوثی

الحدیدہ میں حوثیوں کے ہتھیاروں کے ڈپو پر اتحادی فوج کی بمباری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

یمن میں آئینی حکومت کی حمایت کرنے والے عرب اتحاد نے کہا ہے کہ اس نے حُدیدہ میں حوثی باغیوں کے ہتھیاروں کے ذخیرے کو نشانہ بنایا ہے۔عرب اتحاد نے مزید کہا کہ ہتھیاروں کو حدیدہ کی بندرگاہ سے تجارتی احاطہ میں منتقل کیا گیا تھا۔ حدیدہ کی بندرگاہ ایک فوجی بیرک ہے جس سے علاقائی اور بین الاقوامی سلامتی کو خطرہ ہے۔

عرب اتحاد نے کہا کہ ہم متعدد گورنریوں میں حوثیوں کی صلاحیتوں کو مفلوج کرنے کے لیے بڑے پیمانے پر فوجی آپریشن کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہ ہم شہریوں کو نشانہ بنانے کے ذمہ دار دہشت گرد رہ نماؤں کا سراغ لگا رہے ہیں۔ وہ سزا سے نہیں بچ سکیں گے۔

عرب اتحاد کا کہنا ہے کہ یہ کارروائی خطرے کے جواب میں کی گئی ہے اور شہریوں کو حملوں سے بچانے کے لیے فوجی ضرورت کے اصول کے تحت ہے۔

العربیہ/الحدیث ذرائع نے بتایا کہ اتحاد نے الحدیدہ میں حوثی فوجی بیرکوں کو نشانہ بناتے ہوئے فضائی حملے کیے ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ یمن میں آئینی حمایت کرنے والے عرب اتحاد نے بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب صنعا میں بھی حوثیوں کے ٹھکانوں پر حملے کیے ہیں جن میں دشمن کو بھاری جانی اور مالی نقصان سے دوچار کیا گیا۔

انہوں نے نشاندہی کی کہ اتحادی افواج کے حملوں کے بعد حوثی کیمپوں میں زور دار دھماکے ہوئے ہیں۔

العربیہ/الحدث کے ذرائع نے اس سے قبل اطلاع دی تھی کہ عرب اتحاد نے دارالحکومت صنعا پر نئے فضائی حملے کیے ہیں۔

ذرائع کے مطابق صنعاء میں حوثیوں کے ہیڈکوارٹر کے نام سے جانے والے علاقوں پر فضائی حملے کیے گئے اور انھوں نے یہ اشارہ بھی دیا کہ دارالحکومت کے "الدیلمی" ایئر بیس پر دھماکوں کی آوازیں سنی گئیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں