نجران میں مٹی کے گھر سیکڑوں برس سے روایتی عمارتوں کا منفرد نمونہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے صوبے نجران میں مٹی کے گھر روایتی عمارتوں کا منفرد نمونہ ہے۔ یہ اس بات کا ثبوت ہے کہ علاقے کے سابقہ مکین کتنی شان دار تعمیراتی حس رکھتے تھے۔ یہاں تک کہ سیکڑوں برس گزر جانے پر بھی یہ گھر اپنی جگہ مضبوطی سے کھڑے ہیں۔ یہ نسل در نسل اس علاقے کی تہذیب کے گواہ ہیں اور سیاحوں کے لیے پر کشش عمرانی تشخص رکھتے ہیں۔

ادھر سیاحت کی صنعت میں خصوصی کورسز کے مشیر زیاد بن محمد غضیف نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو ان مقامات کے بارے میں بتایا۔ ان کے مطابق نجران میں واقع مٹی کے محلات زیادہ تر سات سے نو منزلہ ہیں۔ نجران صوبے کے اطراف دیہات ان مٹی کی عمارتوں سے مزین ہیں۔ یہ اپنے طور پر نمایاں یادگار اور منفرد تعمیراتی نمونہ شمار ہوتے ہیں۔ یہ تہذیبی ورثے کا منظر پیش کرتے ہیں جس میں اطراف میں واقع کھیت بھی شامل ہیں۔

زیاد کے مطابق مذکورہ دیہات کا دورہ کرنے والوں کو مختلف شکلوں کی مٹی کی عمارتیں نظر آتی ہیں۔ ہر عمارت اپنے اندر ایک معماری تصویر رکھتی ہے جو نجران صوبے کی تاریخی شناخت اور عمرانی ورثے کی کہانی بیان کرتی ہے۔ نجران میں تعمیری ورثہ متنوع عناصر پر مشتمل ہے۔ ان میں پتھر ، گارا اور لکڑی اہم ترین ہیں۔

نجران کی زیادہ تر عمارتیں سات سے نو منزلہ ہیں۔ ان میں ہر منزل ایک خاص مقصد و غایت کے لیے مختص ہوتی ہے۔ زمینی منزل مویشیوں کے لیے ہوتی ہے۔ اس سے اوپر کی منزل زرعی پیداوار کے لیے ہوتی ہے۔ اس سے اوپر کی منزلیں رہنے اور مختلف گھریلو سرگرمیوں کے لیے مختص ہوتی ہیں۔ چھت پر روٹی کے لیے تندور بھی ہوتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں