سعودی عرب: بغیر فیس کے اقامہ اور ویزا کی میعاد میں 31 مارچ تک توسیع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی سرکاری پریس ایجنسی "ایس پی اے" کے مطابق کل پیر کے روزمملکت سعودی عرب نے بغیر کسی فیس یا مالی معاوضے کے اقامہ ایگزٹ اور ریٹرن ویزوں، اور وزٹ ویزوں کی میعاد میں خود بخود توسیع کرنے کا فیصلہ کیا۔

تفصیلات کے مطابق خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی ہدایات پر عمل درآمد کرتے ہوئے جنرل ڈائریکٹوریٹ آف پاسپورٹ نے بغیر فیس اور بلا معاوضہ غیرملکی شہریوں کے اقاموں ، ایگزٹ اور ریٹرن ویزوں کی میعاد 31 مارچ 2022ء توسیع کر دی ہے۔

سعودی عرب کی وزارت خزانہ کی طرف سے جاری کی گئی توسیع مملکت کی حکومت کی طرف سے عالمی وباCOVID-19 کے اثرات اور نتائج سے نمٹنے کے لیے کی جانے والی مسلسل کوششوں کا حصہ ہے۔اس کا مقصد ملک میں مقیم غیرملکی شہریوں کو کرونا وبا کے دنوں میں احتیاطی تدابیر اور اقدامات میں سہولت فراہم کرنا اور ان کی حفاظت کے ساتھ معاشی اور مالیاتی اثرات کو کم کرنے میں تعاون کرنا ہے۔

یہ توسیع نیشنل انفارمیشن سینٹر کے تعاون سے بھی خود بخود ہو جائے گی۔ اس کے لیے صارفین کو پاسپورٹ کے محکموں کے ہیڈ کوارٹر یا بیرون ملک مملکت کے مشنز میں جانے کی ضرورت نہیں۔

مملکت سے باہر ان ممالک کے باشندوں کے لیے اقامے میں توسیع کی گئی ہے جو کرونا وبا کی وجہ سے ایگزیٹ یا ریٹرن کی میعاد میں توسیع چاہتے ہیں۔ مگر ان ملکوں میں کرونا وائرس پھیلنے کی وجہ سے داخلہ روک دیا گیا ہے۔ ان کے ویزوں اور اقاموں میں 3/31/2022 تک توسیع کی جائے گی تاہم جو لوگ مملکت کے اندر رہتے ہوئے کرونا ویکسین کا کورس مکمل کرچکے ہیں اس سہولت سے مستثنیٰ ہیں۔

سعودی عرب کی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ وزٹ ویزے پر مملکت میں آنے کے بعد یہاں پھنس جانے والے غیر ملکیوں کے وزٹ ویزوں میں بھی اکتیس مارچ تک توسیع کی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں