سعودی عرب: تبوک کے جبل مدین میں برفانی ماحول کی چند جھلکیاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے شمالی علاقے تبوک کے پہاڑوں اور بالائی مقامات پر برف باری کی خبریں آئے روز سامنے آتی ہیں۔ حال ہی میں ایک مقامی فوٹو گرافر نے برف باری کے ماحول کو اپنے کیمرے کی آنکھ میں محفوظ کرکے یہ ثابت کیا ہے کہ تبوک میں کس قدر برف باری ہوتی ہے اور لوگ اس سے کس طرح لطف اندوز ہوتے ہیں۔

فوٹو گرافربشیر السرحانی نے تبوک کے علاقے میں برف باری کے دوران فوٹو گرافی کی اور برف باری کی تصویر کشی کی۔ اس نے کہا کہ یہ تصویریں زمین اور فطرت سے میر محبت کا اظہار ہیں۔ان تصویروں کو تبوک اور اس کے برفانی ماحول کا تعارف کرانے کے لیے استعمال کیا۔ شہرکے مفضافات میں سیاحت کے فروغ میں یہ مناظر غیر معمولی اہمیت رکھتے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے با کرتے ہوئے بشیر السرحانی نے کہا کہ وہ مسلسل تین سال سے انتہائی خوبصورت سیاحتی مقامات، خاص طور پر الظہر پہاڑی علاقے کی بلندیوں پر بارش اور برف باری کے مناظر کو دستاویزی شکل دینے کے لیے کوشاں ہیں۔ سلطنت کے شمال مغرب میں ایک پہاڑ کو مدین پہاڑی سلسلہ کا نام دیا جاتا ہے، جو تبوک کے علاقے میں ایک میدان سے قریب واقع ہے۔ سطح سمندر سے اس کی بلندی 1,828 میٹر (5,997 فٹ) ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ جنوبی تبوک کی بلندی "حرہ الرھاۃ" 3,600 کلومیٹر 2 اونچا ہے۔

اس کے علاوہ موسمیات کے قومی مرکز نے کل کے موسم کے بارے میں اپنی رپورٹ میں شمالی سرحدی علاقوں، الجوف، تبوک کے کچھ حصوں میں سرد موسم اور جزوی طور پر ابر آلود آسمان اور رات اور صبح کے وقت دھند کی پیش گوئی کی ہے۔ ان علاقوں کے کچھ حصوں کے ساتھ ساتھ مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ کے علاقوں کے بالائی علاقوں میں بلندیوں کے کچھ حصوں میں بارش کا امکان ہے جب کہ وسطی علاقوں میں گرد آلود ہوائیں چلنے کی پیش گوئی کی گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں