"غذاء کے بدلے بجلی" ،،، سعودی وزیر توانائی کا عراقی ہم منصب سے مذاق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی وزیر توانائی شہزادہ عبدالعزيز بن سلمان نے ظرافت کے ذریعے اپنے عراقی ہم منصب احسان عبدالجبار کے ساتھ اجلاس کی سنجیدگی کو توڑ دیا۔ اجلاس میں سعودی عرب اور عراق کے درمیان بجلی سے متعلق ایک سمجھوتے پر دستخط ہوئے۔ اس موقع پر سعودی وزیر توانائی نے عراق کے مشہور کھانوں کا حوالہ دیتے ہوئے مسکرا کر کہا کہ "ہم آپ پر بجلی کے مقابل غذا کی شرط رکھتے ہیں"۔

سوشل میڈیا پر زیر گردش گفتگو کے مطابق سعودی وزیر توانائی نے ازراہ مذاق اپنی گفتگو میں بعض عراقی کھانوں کے نام شامل کیے۔

بغداد اور ریاض کے بیچ توانائی کے شعبوں میں مفاہمتی یادداشتوں پر دستخط کے ضمن میں ہونے والی ملاقات میں شہزادہ عبدالعزیز نے احسان عبدالجبار سے کہا کہ یہ سمجھوتے عراقی کھانوں کے ساتھ موقوف ہیں مثلا مسکوف مچھلی اور موصل کے کبا وغیرہ".

اس کے جواب میں عراقی وزیر کا کہنا تھا کہ "ہر چیز آپ تک پہنچ جائے گی"۔ شہزادہ عبدالعزیز نے مزاحا جواب دیا کہ "چلیے پھر ہم غذا کے مقابل بجلی پر متفق ہو جاتے ہیں"۔

مقبول خبریں اہم خبریں