’عبدالمجید عبداللہ نے سعودی فن کی تاریخ کا ریکارڈ توڑ دیا‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کی جنرل اتھارٹی فار انٹرٹینمنٹ کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے چیئرمین ترکی آل الشیخ نے انکشاف کیا ہے کہ فن کارعبدالمجید عبداللہ کا کنسرٹ آج جمعہ کو ریاض شہر کےبلیوارڈ میں محمد عبدہ ایرینا تھیٹر میں ہوگا۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ کنسرٹ مشرق وسطی میں کسی عرب فنکار کے کنسرٹس کی تاریخ میں سب سے بڑا ایونٹ ہوگا۔ ان کا کہنا تھا کہ عبدالمجید عبداللہ کے کنسرٹ کا اسپانسر شپ نے نیا ریکارڈ قائم کیا ہے اور اس نے سعودی آرٹ کی تاریخ میں سابقہ ریکارڈ توڑ دیے ہیں۔

آل الشیخ نے جمعرات کو "عبدالمجید نائٹ" پارٹی کے اسپانسرز کے لیے دستخطی تقریب کے دوران فن کار عبدالمجید عبداللہ اور روتانا کے سی ای او سالم الہندی کی موجودگی میں کہا کہ"مجھے خوشی ہے کہ فنکار عبدالمجید 5 سال کے وقفے کے بعد دوبارہ اسٹیج پر جلو گر ہوئے ہیں۔ عبدالمجید کے بعد دس راتیں بھی دی جائیں تو وہ عبدالمجید کی دو راتوں کے برابر بھی نہیں ہوں گی‘‘۔

انہوں نے "عبدالمجید نائٹ " کے لیے موسیقی کے حوالے سے کی گئی کوششوں کے لیے موسیقی بینڈ کی کاوش کو سراہا۔ انہوں نے کہا کہ عبدالمجید عبداللہ سنہ 2019ء میں اسٹیج پر آئے جس کے بعد آج 2022ء میں ہم انہیں دوبارہ اسٹیج پر لے کرآئے ہیں۔

کانفرنس کے دوران آل الشیخ نے کہا کہ میں نے ایک بہت بڑا کنسرٹ منعقد کرنے کا ارادہ کیا تھا جس میں فنکار عبدالمجید عبداللہ، راشد المجید اور ماجد المہندس کو مدعو کیا جانا تھا۔ اس تقریب میں تین لاکھ لوگوں کی شرکت متوقع تھی مگر عبدالمجید عبداللہ کی صحت نے اس کی اجازت نہیں دی۔

مقبول خبریں اہم خبریں