سیول میں تہران کے منجمد فنڈز سے متعلق ایران اور کوریا میں مذاکرات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

جنوبی کوریا کی یونہاپ خبر رساں ایجنسی نے ہفتے کے روز ایک باخبر ذریعے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ جنوبی کوریا اور ایران اگلے ماہ مذاکرات کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں تاکہ ایران پر عائد امریکی پابندیوں کے تحت سیول میں تہران کے منجمد اثاثوں پر برسوں سے جاری تنازع کے حل کے طریقوں پر تبادلہ خیال کیا جا سکے۔

ذرائع نے اپنی شناخت مخفی رکھتے ہوئے خبر رساں ایجنسی کو بتایا کہ اگر امریکا ایران پر عائد پابندیوں میں نرمی کرتا ہے تو ورکنگ گروپس منجمد ایرانی اثاثوں کی منتقلی پر بات چیت کریں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکام پابندیاں ہٹائے جانے کے بعد ایران سے تیل کی درآمد دوبارہ شروع کرنے کے امکان کے بارے میں مزید بات کر سکتے ہیں۔

جنوبی کوریا میں ایران کے منجمد اثاثوں کا تخمینہ امریکی پابندیوں کے تحت 7ارب ڈالر ہے جو سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے 2018 میں 2015 کے ایران جوہری معاہدے سے دستبرداری کے اعلان کے بعد دوبارہ عائد کی گئی تھیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں