حدُیدہ میں حوثی ملیشیا کی شہریوں پر گولہ باری، مسجد پر بیلسٹک میزائل حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ایرانی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا یمن میں شہریوں کے خلاف اپنی خلاف ورزیاں جاری رکھے ہوئے ہے۔

اتوار کے روز الحدیدہ گورنری کے مغرب میں حیس کے شمال میں البغیل کے علاقے میں ایک شہری ہلاک اور ایک ہی خاندان کے دو افراد زخمی ہو گئے۔ یہ شہری اس وقت زخمی ہوئے جب مارٹر گولہ ان کے گھر پر آ گرا۔

البغیل الجراحی کے جنوب میں حیس کے شمال میں ایک علاقہ ہے جہاں ایرانی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا شہریوں پر اپنا غصہ نکالتی ہے۔ حوثی ملیشیا نے ان کے گھروں کے قریب انکی زمینوں پر لاکھوں بارودی سرنگیں بچھائی گئی ہیں۔

دہشت گرد حوثی ملیشیا نے مشرقی یمن کے شبوا گورنری کے ضلع عسیلان میں الصباح کے علاقے میں عبداللہ بن مسعود مسجد کو بھی بیلسٹک میزائل سے نشانہ بنایا۔

حوثی ملیشیا کی طرف سے شروع کی گئی میزائل شیلنگ میں 4 شہری جاں بحق اور 5 دیگر زخمی ہوئے۔ اس کے علاوہ مسجد کی عمارت، کھڑکیوں اور لائٹ کو بھی خاصا نقصان پہنچا اور متعدد شہری گاڑیوں کو آگ لگا دی گئی۔

ایک مقامی ذرائع نے بتایا کہ 45 سالہ عبد محمد عجم گھر پر مارٹر گولہ لگنے سے ہلاک ہو گئے۔ اس کے علاوہ 65 سالہ داؤد محمد عجم اور ان کی بیٹی 20 سالہ غدیر داؤد عجم گولے کے شیل لگنے سے زخمی ہوگئے۔

ذرائع نے مزید کہا کہ مارٹر گولے سے نوجوان خاتون غدیر کی ٹانگیں کٹ گئیں۔

حوثی ملیشیا شبوا میں رہائشی مقامات اور مساجد کو وحشیانہ حملوں کا نشانہ بنایا۔ ملیشیا شہریوں کے خلاف اپنے انسانیت سوز جرائم کا ارتکاب جاری رکھے ہوئے ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں