سعودی عرب میں قدرتی خوبصورتی کے چند دلفریب مناظر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی فوٹوگرافرعبداللہ العقیل کی جانب سے شوٹ کی گئی شاندار فوٹیج میں مملکت کے مختلف خطوں میں فطرت کی خوبصورتی کو دستاویزی شکل دی گئی ہے۔ یہ مناظر بارش، برف اور ہریالی کے درمیان موسموں پر مشتمل ہیں۔

انہوں نے "العربیہ ڈاٹ نیٹ" سے بات کرتے ہوئےکہا کہ مملکت میں فوٹوگرافروں کے ایک ایسے گروپ میں شامل ہیں جو صحراؤں اور پہاڑوں میں خوبصورتی کے مقامات کی پیروی کرنا پسند کرتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ بہت سے ایسے مناظر ہیں جن کی کوئی بھی توقع نہیں کرتا کہ وہاں موجود ہوں۔اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ سعودی عرب میں کتنے خوبصورت اور دلفریب قدرتی مقامات موجود ہیں۔

سعودی فوٹو گرافر نے کہا کہ سفر کرنا، دریافت کرنا اور ان خوبصورت سائٹوں کی رہ نمائی کرنا میرا پسندیدہ مشغلہ ہے۔ میں مملکت میں ہر اس مقام پرجاتا ہوں جو قابل دید ہو۔ اس کا کہنا تھا کہ فوٹو گرافی کےلیے وہ کیمرے کے علاوہ نئے اسمارٹ فون کا بھی استعمال کرتا ہے۔

عبداللہ العقیل نے کہا کہ موسم گرما میں مملکت میں سب سے خوبصورت مقامات رجال المع اور عسیر ہیں۔ جولائی اور اگست کے مہینوں میں ان کی خوبصورت عروج پر ہوتی ہے۔ سردیوں میں وہ العلا، تبوک، حائل اور مغربی ساحل کا رخ کرتا ہے۔ اس کی خواہش ہے کہ ٹورسٹ گائیڈ بن کر لوگوں کی رہ نمائی کرے۔

انہوں نے انکشاف کیا کہ انہوں نے حال ہی میں وادی الدیسہ کی تصویر کشی کی ہے جو کہ تبوک کے جنوب مغرب میں واقع وادیوں میں سے ایک مشہور وادی ہے۔ دنیا کے کئی ممالک کے سیاحوں کے لیے ایک سیاحتی مقام ہے۔ ان مقامات کی سیر سے آنکھوں کو تازگی اور فرحت ملتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں