عراق میں فضائی حملے میں داعش کے چھ جنگجو ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عراق کے سکیورٹی میڈیا سیل نے نینوی آپریشن کمانڈ کے سیکٹر کے اندر فضائیہ کے حملے میں داعش کے 6 دہشت گردوں کو ان کے اڈے کے اندر مارنے کا دعویٰ کیا ہے۔

اتوار کے روز جاری کردہ سیل کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ آپریشن نینوا آپریشنز کمانڈ میں فیلڈ ملٹری انٹیلی جنس کی جانب سے دہشت گردوں کے ٹھکانوں تک پہنچنے کی کوششوں میں شدت کے بعد کیا گیا۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ جوائنٹ آپریشنز کمانڈ کی منصوبہ بندی اور نگرانی کے ساتھ فضائیہ کے ہاکس نے عراقی ایف 16 طیاروں کے ذریعے ایک فضائی حملہ کیا جس میں داعش کے گروہ کے چھ ارکان ہلاک ہوگئے

داعشی دہشت گردوں کو الشیخ یونس گاؤں کے قریب ایک ٹیلے پر نشانہ بنایا۔

داعش کی باقیات کا تعاقب

بیان میں کہا گیا ہے کہ ہماری سیکیورٹی فورسز ’داعش‘ کے دہشت گرد گروہوں کو سزا دینے اور ان کے تعلقات منقطع کرنے کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں۔ ہم آپ کو اس آپریشن کے نتائج کے بارے میں مزید تفصیلات بعد میں فراہم کریں گے۔

سیکیورٹی میڈیا سیل نے اس سے قبل تین F-16 فضائی حملوں کے ذریعے العظیم واقعے کے ذمہ دار دہشت گرد سیل کو ہلاک کرنے کا اعلان کیا تھا۔

قابل ذکر ہے کہ داعش کے عناصر کے ایک گروپ نے گذشتہ ہفتے ملک کے مشرق میں دیالی گورنری میں عراقی فوج کے فرسٹ ڈویژن کے ایک ٹھکانے پر حملہ کیا تھا۔ اس میں درمیانے ہتھیاروں کا استعمال کرتے ہوئے 11فوجیوں کو ہلاک کر دیا تھا۔

سکیورٹی الرٹ

گذشتہ دنوں کے دوران داعش کی باقیات پھر سے ابھری۔ شام اور عراق دونوں ملکوں میں داعشی جنگجو ایک بار پھر متحرک ہوئے ہیں جس کے بعد عراق میں سکیورٹی ہائی الرٹ کر دیا ہے۔

شام میں داعش کے متعدد افراد نے الحسکہ الصناعہ جیل پر حملہ کیا جس کے نتیجے میں تقریباً 330 داعش اور شامی ڈیموکریٹک فورسز کے ارکان مارے گئے۔

اس واقعے نے عراقی فورسز کو ان جیلوں کا بھی معائنہ کرنے کی مہم چلانے پر مجبور کیا جہاں ملک میں داعش کے عناصر موجود ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں