درندہ صفت بھارتی نے کویتی خاندان کو موت کے گھاٹ اتار دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بھارت سے تعلق رکھنے والے ایک شخص نے کویت میں ایک خاندان کے تمام افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔ قتل عام کے اس ہولناک واقعے نے پورے ملک کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق تین رکنی خاندان کو بے دردی سے موت کے گھاٹ اتارنے میں ملوث بھارتی کو عدالت میں پیش کیا۔ ملزم نےعدالت کے سامنے میاں بیوی اور ان کی ایک بچی کو قتل کرنے کے جرم کا اعتراف کیا۔

کویتی وزارت داخلہ کی جانب سے رپورٹ موصول ہونے کے بعد اس واقعے کی تفصیلات 3 روز قبل سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھیں۔ تحقیقات سے لیکس کے مطابق یہ جرم 25 فروری کی صبح ساڑھے پانچ بجے ہوا۔

ابتدائی طور پر وزارت داخلہ نے گھریلو ملازم کو گرفتار کیا جو خاندان کے لیے فی گھنٹہ کی بنیاد پر کام کرتا تھا۔ پہلے ملزم کے ساتھ تین دیگر مشتبہ افراد کو جرم سے ایک دن قبل مقتول کے گھر میں ان کی موجودگی کے بارے میں پوچھ گچھ کے لیے طلب کیا گیا۔

لیکن پورے دن کی چھان بین اور تفتیش کے بعد وزارت داخلہ نے اس قتل کو خارج از امکان قرار دے دیا اور تفتیشی اداروں نے تحقیقات کو تیز کرتے ہوئے پڑوسیوں اور ان کے گھر کے باہر لگے کیمروں کی مدد سے جرم کے سراغ اکٹھے کیے۔ یہاں تک کہ سوگوار خاندان کے گھر میں گھسنے والے شخص نے اپنی رقم ادا نہ کرنے کے پس منظر میں بجلی کاٹ کر ان سب کو قتل کردیا۔

فوجداری سیکیورٹی سیکٹر کے اہلکاروں نے مجرم پر گھات لگا کر حملہ کیا اور اسے پکڑ لیا۔ اسے 3 دن کے اندر فروانیہ گورنری میں واقع سلیبیہ کے علاقے سے گرفتار کر لیا۔ معلوم ہوا کہ اس کے پاس بھارت کی شہریت ہے۔ اس نے پہلی گھر کی بجلی کاٹی اور اس کے بعد گھر میں موجود تین افراد کو قتل کردیا۔ مجرم نے واردات کے بعد کپڑے تبدیل کیے۔ گھر میں موجود کچھ رقم اور سونے کے زیورات بھی چرائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں