سعودی عرب کے ساتھ مزید دفاعی تعاون کے منتظر ہیں: امریکی سفارت خانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں امریکی سفارت خانے کی قائم مقام سفیر مارٹینا سٹرونگ نے امریکی پویلین کے افتتاح کے موقع پر عالمی دفاعی نمائش میں شرکت کرنے والی پچہتر امریکی کمپنیوں سے خطاب کیا جو کہ نمائش میں سب سے بڑا پویلین ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکی کمپنیاں سعودی عرب کے دفاع کو مضبوط بنانے کے لیے اہم سیکیورٹی پارٹنر ہیں۔

انہوں نے کہا کہ آج ہم اس تاریخ کا احترام کرتے ہیں اور آنے والی دہائیوں میں مزید دفاعی تعاون کے منتظر ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ امریکا اور سعودی عرب کے درمیان سیکیورٹی پارٹنرشپ کا آغاز 1945 میں یو ایس نیوی کے کروزر پر ہوا جب شاہ عبدالعزیز نے یو ایس ایس کوئنسی پر سوار صدر روزویلٹ سے ملاقات کی۔ ان کی تاریخی ملاقات اور مشترکہ نقطہ نظر نے کئی دہائیوں کے مضبوط سیکورٹی تعلقات کو جنم دیا۔

غور طلب ہے کہ ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے گذشتہ شب پہلی عالمی دفاعی نمائش کا افتتاح کیا جس کا اہتمام جنرل اتھارٹی برائے ملٹری انڈسٹریز نے 3 تا 6 شعبان 1443 ہجری بمطابق 6 تا 9 مارچ 2022 کے دوران کیا تھا۔

ولی عہد نے نمائش کی سہولیات کا دورہ کیا، جس میں دنیا بھر سے 42 ممالک کی نمائندگی کرنے والی 590 سے زائد کمپنیاں شرکت کررہی ہیں۔ اس کے علاوہ دفاع اور سلامتی کے شعبے اور دیگر شعبوں میں متعدد قومی سرکاری اداروں کی شرکت اور حاضری بھی شامل ہے۔فوجی اور دفاعی صنعتوں کی نمائندگی کرنے والی بہت سی کمپنیاں اپنے عسکری سازو سامان کی نمائش کر رہی ہیں۔

ولی عہد کو ورچوئل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر کے بارے میں بریفنگ دی گئی، جو جدید ترین سسٹمز اور ٹیکنالوجیز سے لیس ہےاور بڑی بین الاقوامی دفاعی کمپنیوں کے تیار کردہ کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹرز کے مستقبل کی تقلید کرتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں