اردن: شہزادہ حمزہ نے غلطی کا اقرار کر کے شاہ عبداللہ سے معافی مانگ لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اردن میں شہزادہ حمزہ نے کچھ عرصہ قبل پیش آنے والے "فتنہ" کیس کے واقعات پر ملک کے فرماں روا شاہ عبداللہ الثانی کو معذرت پیش کی ہے۔ اس سلسلے میں تحریر کیے گئے ایک خط میں شہزادہ حمزہ نے کہا ہے کہ "میں ان تمام تصرفات پر اردن کے عوام اپنے پورے خاندان سے معذرت چاہتا ہوں"۔ یہ خط اردن کی سرکاری خبر رساں ایجنسی نے جاری کیا ہے۔

خط میں شہزادہ حمزہ نے گذشتہ برسوں کے دوران میں واقع ہونے والے ضرر رساں واقعات کے حوالے سے اپنی قومی ذمے داری قبول کی۔

اردن کی سرکاری خبر رساں ایجنسی کے مطابق اس سے قبل اتوار کی شام شاہ عبداللہ الثانی نے شہزادہ حمزہ سے ملاقات کی تھی۔ ملاقات کی درخواست شہزادے کی جانب سے کی گئی تھی۔

دوسری جانب اردن میں شاہی دیوان کے اعلان میں کہا گیا ہے کہ "شہزادہ (حمزہ) کی معذرت قومی خدمت میں شہزادوں کے مقررہ کردار کی جانب واپسی کے لیے درست سمت میں کیا گیا اقدام ہے"۔

گذشتہ برس "فتنہ" کیس کے انکشاف کے بعد اردن کے فرماں روا نے شہزادہ حسن بن طلال کو اس معاملے کی نگرانی کا مکلف بنایا تھا۔ اس وقت شہزادہ حمزہ نے عہد کیا تھا کہ وہ آئین اور شاہی ہاشمی خاندان کی طریقہ کار کی پاسداری کریں گے۔

اردن میں ریاستی امن کی عدالت نے "فتنہ" کیس کے سلسلے میں گذشتہ برس جولائی میں شاہی دیوان کے سابق سربراہ باسم عوض اللہ کو 15 سال قید کی سزا سنائی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں