سعودی وزیر خارجہ کا ایران کی جانب سے حوثیوں کی امداد روکنے پر زور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی وزیرخارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے ایران کے لیے امریکا کے خصوصی ایلچی راب میلے سے ملاقات کی ہے اوران سے تہران اور عالمی طاقتوں کے درمیان 2015ء میں طےشدہ جوہری معاہدے کی بحالی سے متعلق مذاکرات پرتبادلہ خیال کیا ہے۔

شہزادہ فیصل اورمیلے کے درمیان قطرمیں دوحہ فورم کے موقع پر ہفتے کے روزملاقات میں ایران کے جوہری پروگرام کے حوالے سے دوطرفہ تعاون کو بڑھانے کے علاوہ ’’بین الاقوامی معاہدوں میں ایران کی خلاف ورزیوں‘‘ سے نمٹنے کے لیے مشترکہ کوششوں کومربوط بنانے پربات چیت کی ہے۔

شہزادہ فیصل اورراب میلے نے ایران کو دہشت گرد ملیشیاؤں کی حمایت سے دستبردار کرانے کے لیے مشترکہ کاوشوں پر بھی گفتگو کی ہے تاکہ ان سے مشرقِ اوسط اور دنیا کی سلامتی اور استحکام کو لاحق خطرات سے نمٹا جاسکے۔

سعودی پریس ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ہفتے کے روز شہزادہ فیصل نے فرانسیسی وزیرخارجہ ژاں وائی ویس لودریان سے بھی ٹیلی فون پردونوں ملکوں کے درمیان تعلقات پرگفتگو کی ہے۔

رپورٹ میں مزیدکہا گیا ہے کہ دونوں وزراء نے مختلف علاقائی اور بین الاقوامی امور میں دو طرفہ ہم آہنگی بڑھانے کے ذرائع پرتبادلہ خیال کیا ہے۔اس کا بنیادی مقصد مشرقِ اوسط میں سلامتی اور استحکام کو مستحکم کرنا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں