سعودی عرب:السودہ کے علاقے میں ژالہ باری، شہرنے سفید چادر اوڑھ لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کے جنوبی علاقے عسیرمیں السودہ شہرمیں بدھ کی شام ہونے والی ژالہ باری سے شہر نے سفید چادر اوڑھ لی۔ السودہ شہر کے بیشتر مقامات میں ژالہ باری کے مناظر سوشل میڈیا پرپھیل گئے اور صارفین نے ژالہ باری کی تصاویر بڑے پیمانے پر شیئر کیں۔

سوشل میڈیا پر السودہ میں ژالہ باری کے مناظر شیئر کرنے والوں میں فوٹو گرافر احمد حاضر بھی شامل ہیں۔

انہوں نے "العربیہ ڈاٹ نیٹ" سے بات کرتے ہوئے کہا کہ مُجھے ایسے لمحات کی منفرد طریقے سے فوٹو گرافی اور انہیں دستاویزی شکل دینے کا جنون ہے۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ عسیر کا خطہ خوبصورتی کا ایک ایسا ’آئیکن‘ ہے جس کا کوئی مقابلہ نہیں کر سکتا، خاص طور پر جب بارش اور برف باری ہوتی ہےتو اس خطے کی خوبصورت اور بھی بڑھ جاتی ہے۔ انہوں نے حبلہ کے علاقے میں بارش کے اثرات کو ٹویٹر پر اپنے آفیشل اکاؤنٹ پر بھی شائع کیا اور دلکش آبشاریں دلفریب مناظر بھی پوسٹ کیے۔

احمد نے ڈرون کے ذریعے گرین فالکنز، آزمائشی پرواز کرنے والے طیاروں، رائل ایئر فورس اور بہت سے دیگر مناظر کی بھی عکس بندی کر رکھی ہے۔ وہ فوٹو گرافی کے لیے زیادہ تر ڈرون طیارے کا استعمال کرتے ہیں۔ ان کی فوٹو گرافی سوشل میڈیا پلیٹ فارمز، نمائشوں اور کئی علاقائی اور عالمی مقابلوں شامل کی جا چکی ہیں۔ طیاروں کی منفرد انداز میں ان کی لی گئی تصاویر نے انہیں ایوارڈز بھی دلوائے ہیں۔

السودہ کے بارے میں ہم کیا جانتے ہیں؟

قابل ذکر ہے کہ السودہ عسیر پہاڑی سلسلے میں سعودی عرب کا سب سے اونچا پہاڑ ہے جس کی سطح سمندر سے بلندی 3,133 میٹر ہے۔ پہاڑ گھنے عرعر کے درختوں سے ڈھکا ہوا ہے، جو قدرتی جنگلات ہیں۔ یہ علاقہ ابہا شہر سے 20 کلومیٹر دور سطح سمندر سے 3015 میٹر کی بلندی پر ایک سیاحتی گاؤں ہے اور اس میں پہاڑ کی چوٹی تک کیبل کار کے ذرریعے رسائی ممکن بنائی گئی ہے۔

جہاں تک الحبلہ پارک کا تعلق ہے۔یہ عسیر کے پارکوں میں سے ایک ہے۔ یہ پارک سعودی عرب کے جنوب مغر ب میں ابہا شہر سے تقریباً 52 کلومیٹر اور خمیس مشیط شہر سے 40 کلومیٹر کے فاصلے پر ہے۔

الحبلہ کا نام دو وادیوں کے بیچ میں واقع پارک کے قریب واقع گاؤں الحبلہ کے نام پر رکھا گیا ہے جہاں کے رہائشی علاقے کے دشوار گذار علاقوں کی وجہ سے رسیوں کو آمدورفت اور سامان اور سامان کی نقل و حمل کے لیے استعمال کرتے تھے لیکن اب یہ مربوط سروسز کے ساتھ ایک ماڈل ٹاؤن بن گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں