اسرائیلی فورسز کا مسجد اقصیٰ پر دھاوا، درجنوں مرابطین اور نمازی زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

بیت المقدس میں آج جمعرات کے روز مسجد اقصیٰ میں نمازیوں اور اسرائیلی سیکورٹی فورسز کے درمیان جھڑپیں دیکھی جا رہی ہیں۔ اس دوران میں درجنوں افراد زخمی ہو گئے۔

فلسطینی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اسرائیلی فورسز نے مسجد اقصیٰ پر دھاوا بولنے کی کوشش کے دوران میں آنسو گیس اور ربڑ کی گولیوں کا استعمال کیا۔ اس کے نتیجے میں فلسطینی شہری دم گھٹنے کا شکار اور زخمی ہو گئے۔

ایجنسی نے مزید بتایا کہ اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے مسجد کے منبر کا شیشہ بھی چکنا چور ہو گیا۔ درجنوں یہودی آباد کاروں نے اسرائیلی پولیس کی سرپرستی میں باب المغاربہ کی سمت سے مسجد پر ہلہ بول دیا۔

فلسطینی تنظیم "فتح موومنٹ" نے مسجد اقصیٰ پر یہودی آباد کاروں کے دھاوے کا مقابلہ کرنے کے واسطے عام نفیر کے اعلان پر زور دیا۔

فلسطینی وزارت خارجہ نے اس صورت حال کی مذمت کی ہے۔ وزارت نے اسرائیلی وزیر اعظم نفتالی بینیٹ کو اس کا براہ راست ذمے دار ٹھہرایا۔ مزید یہ بھی کہا گیا ہے کہ اسرائیلی حکومت کا فیصلہ ،،، اسرائیل کی جانب سے سرکاری طور پر مذہبی جنگ چھیڑ دینے کے اعلان کے مترادف ہے جو پورے خطے کو اپنی لپیٹ میں لے سکتی ہے۔

یہ تصادم ایسے وقت میں دیکھنے میں آ رہا ہے جب مسجد اقصیٰ میں غیر مسلموں کی زیارت کے پروگرام کا دوبارہ آغاز کیا گیا ہے۔ رمضان کے آخری عشرے کے دوران میں یہ پروگرام روک دیا گیا تھا۔

اس پروگرام کے تحت غیر ملکی غیر مسلموں اور یہودیوں کو مسجد اقصیٰ کے صحنوں میں داخل ہونے اور وہاں گھومنے پھرنے کی اجازت دی گئی ہے تاہم کسی بھی مذہبی شعائر کی ادائیگی ممنوع ہے۔

سوشل میڈیا پر زیر گردش وڈیو کلپوں میں القبلی مصلے کے اندر متعدد نمازیوں کو دیکھا جا سکتا ہے جب کہ مصلے کے دروازوں پر اسرائیلی سیکورٹی فورسز تعینات ہیں۔

اسرائیلی وزیر اعظم کے ترجمان اوفیر جنڈلمین نے نمازیوں پر الزام عائد کیا کہ وہ اسرائیلی سیکورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپوں کی تیاری کر کے آئے تھے۔ عربی زبان میں کی گئی اپنی ٹویٹ میں ترجمان نے کہا کہ "فلسطینی بدمعاشوں نے دیواروں کو نقصان پہنچایا اور توڑ پھوڑ کی .. وہ پہلے ہی پتھروں کی بڑی تعداد القبلی مصلے میں لے کر آ چکے تھے۔ یہ عمل اس جگہ کی حرمت کے خلاف ہے"۔

جمعے کو علی الصباح مسجد اقصیٰ کے صحنوں میں فلسطینیوں اور اسرائیلی فوج کے درمیان پر تشدد جھڑپیں ہوئیں۔ ان میں کم از کم 42 افراد زخمی ہوئے۔ بعد ازاں العربیہ اور الحدث کے نمائندے کے مطابق اسرائیلی فوج نے مسجد کے صحنوں سے نکل کر اس کے تمام دروازے کھول دیے تھے۔

توقع ہے کہ کل جمعے کے روز مسجد اقصیٰ میں نماز ادا کرنے کے لیے ہزاروں فلسطینی پہنچیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں