شام:نامعلوم طیاروں کی اسدحکومت کے زیرانتظام علاقوں اورتنصیبات پربمباری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

شام کے مشرقی صوبہ دیرالزورمیں نامعلوم طیارے نے ہفتے کے روز تیل کی دولت سے مالامال علاقوں پربمباری کی ہے۔اس علاقے پراسد حکومت اور ایران کے اتحادی ملیشیا گروپوں کا قبضہ تھا۔

برطانیہ میں قائم شامی رصدگاہ برائے انسانی حقوق نے اطلاع دی ہے کہ اس حملے میں کوئی جانی یا مادی نقصان نہیں ہوا۔صوبہ دیرالزور میں ایک ہفتے میں اس طرح کایہ دوسرا حملہ ہے۔

رصدگاہ کے مطابق حویجہ قاطع کے علاقے اور دیرالزور شہر کے شمال میں واقع پل سے پانچ دھماکوں کی آوازیں سنائی دی ہیں۔

شام کے سرکاری ذرائع ابلاغ نے بھی اس حملے کی اطلاع دی لیکن اس کی کوئی تفصیل نہیں بتائی۔تزویراتی اہمیت کے حامل صوبہ دیرالزورعراق کی سرحد سے متصل واقع ہے اور اس میں تیل کے وسیع ذخائرہیں۔

ایران کی حمایت یافتہ ملیشیا اور شامی صدربشارالاسد کی حکومت کی افواج اس علاقے پرکنٹرول ہے۔ماضی میں اکثر اسرائیلی جنگی طیاروں نے اس صوبہ اور شام کے دوسرے علاقوں میں شامی حکومت کی تنصیبات اور ٹھکانوں کو نشانہ بنایا ہے۔اسرائیل نے گذشتہ برسوں میں شام میں مختلف اہداف پرسیکڑوں حملے کیے ہیں لیکن وہ اس طرح کی کارروائیوں کو شاذونادرہی تسلیم کرتا ہے۔

گذشتہ ہفتے شام کے دارالحکومت دمشق کے مضافاتی علاقوں پراسرائیلی میزائل حملے میں چارفوجی ہلاک اور تین زخمی ہوگئے تھے۔شامی وزارت دفاع نے کہا تھا کہ حملے میں مادی نقصان ہواتھا۔رصدگاہ نے بتایا تھاکہ اس حملے میں ایرانی ہتھیاروں کے ڈپووں کو نشانہ بنایا گیاتھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں