نجران کے قبیلے کی قاتل کو غیر مشروط معافی، 105ملین ریال کی دیت مسترد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب میں نجران کے معروف قبیلے آل شثین آل معجبہ یام نے روا داری اور سماجی عفو ودر گذر کی مثال قائم کی ہے۔
قاتل کو غیر مشروط طور پر معاف کر کے دیت کی 105 ملین ریال کی رقم کو مسترد کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق ثار کمشنری کی وادی یتم میں قبیلے نے حجرے میں عمائدین اور شیوخ اور نجران کے باشندوں کا خیر مقدم کیا۔ شیخ المکرمی المکارمہ قبائل جبکہ شیخ ابو ساق آل فاطمہ یام قبائل کے سردار ہیں۔

اس موقع پر مقتول کے خاندان نے کہا کہ ’قصاص سے دستبردار ہونے کے لیے 105 ملین ریال کی پیشکش کی گئی لیکن ہم نے قاتل کو اللہ کی خوشنودی کے لیے غیر مشروط طور پر معاف کر دیا ہے۔‘

یہ واقعہ 18 برس سے پورے علاقے میں بحث کا موضوع بنا ہوا تھا۔ اس موقع پر مقتول کے خاندان نے صلح کے لیے سفید پرچم لہرائے جس پر خوشی اور پسندیدگی کا اظہار کیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں