’پانچ سال کی عمرمیں اساتذہ کواپنے آرٹ کا گرویدہ بنا لیا تھا‘

کانچ کے ٹکڑوں سے فن پارے تخلیق کرنے والے سعودی آرٹسٹ سے ملیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

ایک مختلف فنی زبان میں سعودی آرٹسٹ اصیل المغلوث نے خود کو فن کی دنیا میں ممتازمقام دلانےکے لیے نئے فنی طریقے اوراسلوب اپنا کر اپنی فنی تخلیقات پیش کرنے میں کامیابی حاصل کی ہے۔ الغلوث نے ڈرائنگ کے فن میں مہارت حاصل کی اور کانچ کے ٹکڑوں سے فن پارے تخلیق کرکے فن کے مداحوں کو حیران کردیا۔

سعودی طالب علم اصیل مغلوث امریکا کی کیلیفورنیا ریاست میں مکینیکل انجینیرنگ کی تعلیم حاصل کر رہا ہے لیکن ڈرائنگ اس کا پسندیدہ مشغلہ ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مجھے بچپن سے ہی فنی تخلیقی آرٹ کا شوق تھا اور میں نے اپنی صلاحیت آرٹ میں لگانا شروع کردی تھی۔ ایک دفعہ کنڈرگارٹن کے اساتذہ نے ان کی والدہ کو فون کیا کہ وہ یہ معلوم کریں کہ ڈرائنگ میں ان کی مدد کون کرتا ہے،کیونکہ ان کی تخلیقی صلاحیتیں 5 سال کی عمر سے ہی نمودار ہونا شروع ہوگئی تھیں اور اساتذہ بھی اس کے گرویدہ ہوگئے تھے۔ ان کے فن پارے اسکول کی سب سے خوبصورت پینٹنگز میں سے تھے جو آرٹ بلیٹن بورڈ میں لٹکائے گئے ہیں اور ہر کوئی انہیں آرٹسٹ کے طورپرجانتا تھا۔ جب وہ یونیورسٹی میں پڑھنے کے لیے داخل ہوئے تو چھ سال تک آرٹ کا شوق ترک کردیا تھا۔

کرونا کے دور میں انہوں نے ڈرائنگ کے شعبے میں دوبارہ اپنی فنکارانہ صلاحیتوں کو دریافت کرنے کے لیے اپنے وقت کا زیادہ سے زیادہ استعمال کرنے کا فیصلہ کیا جو تخلیقی کام پیش کرنے کے لیے ان کا پہلا انتخاب تھا۔

غیر روایتی طریقے

شیشے کو توڑ کر پینٹنگ کے بارے میں مغلوث نے کہا کہ آرٹ کا یہ طریقہ انہیں بہت پسند ہے چونکہ انہیں پینٹنگ کے غیر روایتی طریقوں میں سے ایک سمجھا جاتا ہے، اس لیے انہوں نے اپنی ڈرائنگ کو کاغذ اور قلم سے شیشے اور ہتھوڑے کی طرف موڑ دیا۔

انہوں نے کہا کہ میں نےپینٹنگ کے لیے شیشے کی بہت سی مختلف اقسام کا تجربہ کیا۔ آخر کار میں نے شیشے کی ایک قسم کو آرٹ کے نمونوں کے لیے حتمی طور پرمنتخب کیا۔ ساتھ ہی ان کے پاس کرشنگ کی شکل اور سائز کو کنٹرول کرنے کے لیے متعدد ہتھوڑے ہیں جنہیں چلانا نوجوان آرٹسٹ نے خود سیکھا۔

آرٹسٹ نے بتایا کہ فوٹو گرافی کی تکنیک پنسل سے ڈرائنگ کی تکنیک سے ملتی جلتی ہے۔ آپ قلم کو دبا کر روشنی اور سائے کو کنٹرول کرسکتے ہیں۔ اسی طرح ہتھوڑے کو دبانے سے شیشے پر روشنی کی ڈگریاں بنتی ہیں۔

ایک غلط ضرب سے پوری پینٹنگ ضائع ہوسکتی ہے

انہوں نے مزید کہا کہ میں نے اپنی پینٹنگز کے آئیڈیاز میں مکینیکل انجینیرنگ کی تعلیم سے استفادہ کیا جس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ ڈرائنگ ان کا مشغلہ ہے۔ان کا تخلیقی امتیاز ان کا مخصوص اور اختراعی اندازہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ اس طریقے سے ڈرائنگ بہت مشکل ہے کیونکہ کسی بھی غلط اسٹروک سے آرٹسٹ کو پینٹنگ کو مکمل طوردوبارہ بنانا پڑسکتی ہے۔

المغلوث نے کہا کہ شیشے سے ڈرائنگ کسی بھی قسم کی ڈرائنگ سے زیادہ پیچیدہ ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ آپ پیچھے نہیں جا سکتے یا ڈرائنگ کے دوران ہونے والی کسی غلطی کو مٹا نہیں سکتے۔ کیونکہ کریکنگ تصادفی طور پر ہوتی ہے اور کئی بار یہ غیر ارادی جگہوں پر چلا جاتا ہے جس کی وجہ سے شیشے کو دوبارہ لگانا پڑتا ہے۔

انہوں نے اپنی گفتگو کے اختتام پر کہا کہ وہ اس شعبے میں تخلیقی صلاحیتوں کے لیے اپنے تمام فنی آلات کو تیار کرنے، شیشے کو توڑ کر پینٹ کرنے والے آرٹسٹوں میں ایک ہیں اور اس فن کو دنیا میں منتقل کرنے کے لیے کام کر رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں