.

مدینہ منورہ کے شمال میں "غراب" آبی گزر گاہ کے سحر انگیز قدرتی مناظر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں مدینہ منورہ کے شمال مشرق میں صحراء کے قلب میں واقع غراب آبی گزر گاہ کا مقام قدرتی خوب صورتی کا منہ بولتا شاہ کار ہے۔ یہ فطرت کے بیچ درختوں ، بہتے پانی اور قدرتی جنگلات کا حسین امتزاج ہے۔

سعودی فوٹوگرافر رائد العوفی نے قدرت کی اس صناعی کو اپنے کیمرے کی آنکھ میں محفوظ کر لیا۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو کرتے ہوئے العوفی نے واضح کیا کہ وہ مملکت میں خوب صورت مقامات کی تصاویر بنانے کے دل دادہ ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ غراب آبی گزر گاہ کا مقام خشکی کی ان تفریح گاہوں میں سے ہیں جن کی سحر انگیزی مقامی آبادی اور پڑوسی دیہات کے لوگوں کے لیے کشش کا باعث ہے۔ یہاں پر ببول کے درخت شان دار منظر پیش کرتے ہیں۔

غراب آبی گزر گاہ کے النخیل مرکز الحائط اور الشملی کے اضلاع کو الحناکیہ ضلع سے جوڑنے والے راستے پر واقع ہے۔ یہاں سے حائل کا ہائی وے بھی گزرتا ہے۔

یاد رہے کہ النخیل مرکز کو یہ نام النخل کے لفظ سے اشتقاق سے دیا گیا۔ یہ ایک نخلستان ہے جہاں کا پانی میٹھا ہے۔ اس کا تاریخی نام ذی امر ہے۔ بنی امیہ کے دور میں اس مقام پر قریش کی ایک جماعت نے قیام کیا۔ رسول صلى الله عليه وسلم کے دور میں بنی محارب اور ثعلبہ نے یہاں پڑاؤ ڈالا تھا۔ یہاں غزوہ ذات الرقاع بھی ہوا تھا۔

یہاں کی مرکزی وادیوں میں وادی النخیل ، وادی الجفران ، وادی ذارہ اور وادی احامر شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں