اسرائیل کی ایران پر وسیع حملے کے تناظر میں فوجی مشقیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

پہلی بار اسرائیلی فضائیہ اس ماہ کے آخر میں بڑی فوجی مشقوں کے دوران ایران کے خلاف بڑے پیمانے پر حملے کی تربیت کرے گی۔

"ٹائمز آف اسرائیل" کی شائع کردہ ایک رپورٹ کے مطابق بڑے پیمانے پر فضائی مشقوں میں ایرانی جوہری اہداف پر فرضی حملے شامل ہیں۔ یہ مشقیں قبرص میں 29 مئی سے شروع ہونے والی ماہ طویل مشقوں کے چوتھے اور آخری ہفتے کے دوران ہوں گی۔

ایٹمی تنصیبات پر حملہ

رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ اسرائیلی فضائی مشقیں ایرانی جوہری تنصیبات پر حملے کی نقل کرنے کے لیے اپنی نوعیت کا تجربہ ہوگا۔

نطنز
نطنز

انہوں نے مزید کہا کہ اسرائیلی فوج مصنوعی ذہانت کا استعمال کرتے ہوئے ایران میں ممکنہ اہداف کی فہرست تیار کر رہی ہے۔

اسرائیلی فوج کو ایرانی زیرزمین تنصیبات پر حملہ کرنے اور ایران اور خطے میں اس کے اتحادیوں کی طرف سے جوابی ردعمل کی تیاری کے علاوہ پیچیدہ ایرانی فضائی دفاع سے نمٹنے کے طریقے تلاش کرنے چاہئیں۔

اسرائیل کی ایران کے خلاف وسیع پیمانے پر مشقیں ایک ایسے وقت میں ہونے جا رہی ہیں جب دوسری طرف امریکا اور عالمی طاقتیں ایران کے متنازع ایٹمی پروگرام پرتہران کے ساتھ مذاکرات کررہی ہیں۔ اگرچہ یہ مذاکرات فی الحال معطل ہیں۔ اسرائیل نے گذشتہ سال ایران کی جوہری تنصیبات پرممکنہ حملوں کے تناظرمیں مشقوں میں اضافہ کر دیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں