خاتون ملازمہ کو شفٹ کے دوران بیٹھنے سے روکنے پر تجارتی مرکز کے خلاف کارروائی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے دارلحکومت الریاض میں واقع ایک شاپنگ مال میں ملازمت کرنے والی سعودی خاتون کو ڈیوٹی شفٹ کے دوران بیٹھنے سے منع کرنے پر تجارتی مرکز کے خلاف کارروائی کی گئی ہے۔

وزارت ہیومن ریسورسز نے شاپنگ مال کے خلاف کارروائی ایک شہری کی جانب سے ٹویٹ کے بعد کی۔

ٹوئٹر پر شہری نے کہا ہے کہ ’ریاض کے ایک مال کی متعدد دکانوں میں کام کرنے والی سعودی خواتین کو بیٹھنے سے منع کیا جاتا ہے۔ خواہ گاہک ہوں یا نہ ہوں انہیں دوپہر دو بجے سے لے کر رات 11 بجے تک کھڑا رہنا پڑتا ہے‘۔

شہری نے کہا ہے کہ ’تجارتی اداروں کی غیر ملکی انتظامیہ کی طرف سے سعودی ملازموں کے ساتھ ناروا سلوک مداخلت کا تقاضا کرتا ہے‘۔

ٹوئٹ وائرل ہونے پر وزارت ہیومن ریسورسز نے کارروائی کرتے ہوئے جوابی ٹویٹ کیا ہے کہ ’فوری کارروائی کرتے ہوئے مذکورہ اداروں کو لیبر قوانین کی خلاف ورزی پر جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔ مذکورہ تجارتی اداروں کو اس بات کا پابند بنایا گیا ہے کہ ملازمین کو مناسب ماحول فراہم کریں‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں