شامی شہریوں پر امریکی حملہ درست قرار دے دیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

امریکہ نے کہا ہے کہ 2019ء میں شام پر حملے اس کی پالیسی کے عین مطابق تھے۔ ان میں کسی نوعیت کی غفلت یا کوتاہی بھی نہیں کی گئی۔ یاد رہے کہ ان حملوں میں بڑی تعداد میں شام کے شہری ہلاک کردیے گئے تھے۔ اس بارے میں پینٹگان نے بیان بھی جاری کردیا ہے۔

امریکی فوج نے ان حملوں کی تحقیقات کے لیے مقرر کیے جانے والی ٹیم کے کام کی رپورٹ جاری کر دی ہے۔ یہ حملے 18 مارچ 2019ء کو شام کے علاقے باغوث میں مبینہ داعش ’’آئی ایس آئی ایس‘‘ پر کیے گئے تھے۔

گزشتہ سال نیویارک ٹائمز نے رپورٹ دی تھی کہ ان حملوں میں درجنوں غیر محارب شہری مارے گئے تھے۔ دی ٹائمز رپورٹ کے مطابق 70 بے گناہ شامی نشانہ بنے تھے۔ امریکی فوج کے ایک افسر نے کہا تھا کہ حملے ممکنہ طور پر جنگی جرائم کی زد میں آئے ہیں۔ امریکی حملے کو چھپانے کے لیے ہر ممکن حدتک ہر قدم اٹھایا گیا ہے۔ یہ حملے اپنی نوعیت کے تباہ کن حملے تھے۔ لیکن موجودہ تحقیقات میں اخذ کیے گئے نتائج مسترد کردیے گئے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق امریکی فوج کے کمانڈر کو درخواست کی گئی تھی۔ آئی ایس آئی ایس مخالف اتحاد نے ان حملوں کے لیے کہا تھا تاکہ شام کی ڈیموکریٹک فورس کی مدد کی جائے۔ کمانڈر نے پہلے یہ تصدیق کی تھی کہ حملے کی جگہ کوئی شہری موجود نہ ہو۔ حملے کے بعد علم ہوا تھا کہ وہاں شہری موجود تھے جن کی ایک تعداد نشانہ بنی تھی۔ امریکہ نے کہا ہے کہ وہاں کارروائی کے اصول طے شدہ تھے اور نہ ہی جنگی قانون کی خلاف ورزی کی گئی۔ وہاں کمانڈر نے بھی کسی غفلت یا لاپرواہی جان بوجھ کر کی تھی۔ تحقیقاتی رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ انتظامی وجوہات کی وجہ سے امریکی فوجی رپورٹ کی تیاری میں تاخیر ہوئی۔ اس سے ثہ تاثر دیا گیا ہے کہ معاملہ فائنل کردیا گیا ہے۔

امریکی ترجمان جان کربی کے مطابق ان حملوں میں 53 لڑاکا افراد مارے گئے تھے۔ ان میں 51 مرد اور ایک بچہ شامل تھے۔ زخمی ہونے والوں میں 15 شہری مارے گئے جن میں 11 خواتین اور 4 بچے شامل تھے۔ اس سوال پر کہ شہری ہلاکتوں کے ذمہ داران کو کیا سزا دی گئی، جان کربے نے کہا کہ کسی کو ذمہ دار قرار نہیں دیا گیا۔ کسی نے بھی جنگی قوانین پامال نہیں کیے۔ کسی نوعیت کی بدنیتی بھی ان حملوں میں نہیں پائی گئی۔ ان کا کہنا تھا کہ کسی طرح کی کمی یا غلطی کا آئندہ زیادہ بہتر انداز میں خیال کیا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں