ایران کی مقتول کرنل کا انتقام لینے کی دھمکی ، اسرائیل کے شمال میں ہائی الرٹ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایران نے دھمکی دی ہے کہ وہ پاسداران انقلاب کے کرنل صیاد خدائی کے قتل کا انتقام لے گا۔ ایرانی صدر ابراہیم رئیسی نے آج پیر کے روز باور کرایا کہ صیاد کے خون کا بدلہ لا محالہ لیا جائے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ کرنل صیاد کو دہشت گردوں نے ہلاک کیا۔

ادھر با خبر ذرائع نے العربیہ اور الحدث نیوز چینلوں کو بتایا کہ اسرائیل نے شام اور لبنان کے ساتھ شمالی سرحد سیکورٹی کو ہائی الرٹ کر دیا ہے۔ یہ اقدام لبنان میں حزب اللہ ملیشیا یا شامی اراضی میں ایران سے مربوط گروپوں کی جانب سے کسی بھی کارروائی کے اندیشے کے سبب کیا گیا ہے۔

ایرانی انٹیلی جنس نے اتوار کی شام اپنے موقف میں صیاد کے قتل کو ایران میں اسرائیل کے جاسوسوں کا گروہ پکڑے جانے کے ساتھ جوڑا تھا۔ ایرانی وزارت خارجہ نے ضمنی طور پر اسرائیل کے ساتھ مربوط عناصر کو اس جرم کے ارتکاب کا ذمے دار ٹھہرایا۔

دوسری جانب اسرائیلی میڈیا نے شام میں صیاد خدائی کے مشن پر روشنی ڈالی ہے۔ ساتھ ہی باور کرایا گیا ہے کہ وہ ایرانی القدس فورس کے سابق سربراہ قاسم سلیمانی کا مقرب تھا۔ سلیمانی کو جنوری 2020ء میں بغداد ہوائی اڈے کے نزدیک امریکی حملے میں ہلاک کر دیا گیا تھا۔ اسرائیلی میڈیا کے مطابق صیاد خدائی بیرون ملک اسرائیلیوں کو نشانہ بنانے کی کارروائیوں میں ملوث تھا۔

کو دارالحکومت کے مشرق میں مجاہدین اسلام اسٹریٹ کی طرف جانے والی ایک سڑک پر گولی ماری گئی۔

یاد رہے کہ کرنل صیاد خدائی کو اتوار کی سہ پہر دارالحکومت تہران کے مشرق میں اس کے گھر کے سامنے نامعلوم موٹر سائیکل سواروں نے پانچ گولیاں مار کر قتل کیا اور فرار ہو گئے۔ میڈیا رپورٹوں کے مطابق مقتول کی اہلیہ نے اپنے شوہر کو گاڑی میں مردہ پایا اور اس واقعے کی اطلاع دی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں