سرخ لہر- 5: سعودی عرب میں کثیر ملکی لڑاکا بحری مشقوں کا اختتام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے ساحلی شہر جدہ میں’سرخ لہر 5‘ کے عنوان سے ہونے والی کثیر ملکی بحری مشقیں ختم ہو گئیں۔

بحیرہ احمر کے ساحلی ممالک مصر، اردن، سوڈان، یمن، جیبوتی اور صومالیہ کے بحری دستے سعودی عرب کی بحریہ کے ساتھ مشقوں میں شریک رہے۔

مشترکہ مشقوں کے کمانڈر میجر جنرل یحیی عسیری تھے۔ سعودی فضائیہ، بحریہ، بری افواج اور سرحدی محافظوں کے دستوں نے مشقوں میں حصہ لیا۔

فوٹو ایس پی اے
فوٹو ایس پی اے

مشقوں میں متعدد جنگی معرکوں خاص طور پر محفوظ عسکری ٹھکانوں کو دشمن افواج کے دستوں سے پاک کرنے، حملہ کرنے، گولہ بارود استعمال کرنے اور فوجیں اتارنے کی مشقیں کی گئی ہیں۔

لڑاکا طیاروں اور ہیلی کاپٹروں کی مدد سے مشترکہ عسکری اہداف حاصل کرنے کی کارروائیوں میں بھی حصہ لیا۔

سرخ موج
سرخ موج

سعودی عرب کے مغربی بحری بیڑے کے کمانڈر میجر جنرل یحیی عسیری نے بتایا کہ مشقوں کا بڑا مقصد برادر ممالک کے ساتھ عسکری تعاون بڑھانا، عسکری تصورات میں یکسانیت پیدا کرنا، حربی استعداد بڑھانا اور تجربات کا تبادلہ تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں