جدہ میں کچی آبادیوں کے معاوضے کے لیے ایک ارب ریال کی ادائیگی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کے شہر جدہ میں کچی آبادیوں کی کمیٹی نے اتوار کو مملکت کے جنرل اتھارٹی کے گورنر احسان بافقیہ کی موجودگی میں کچی آبادیوں کے معاوضے کی مد معاوضے کی پہلی قسط ایک ارب ریال کی جار کرنے کی تصدیق کی ہے۔ یہ رقم کچی آبادی کے مکینوں کی مسمار کی گئی املاک کے بدلےمیں انہیں دی گئی ہے۔ اس موقعے پر جدہ کے میئر صالح الترکی بھی موجود تھے۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ باقی شہریوں کو معاوضے کی ادائیگی کئی مراحل میں یکے بعد دیگرے ایک ٹائم ٹیبل کے مطابق ریئل اسٹیٹ کی انوینٹری اور تشخیص کے کام کی تکمیل کے بعد کی جائے گی۔ رقم کی ادائیگی سے قبل شہریوں کی املاک کی مطلوبہ دستاویزات مکمل کی جائیں گی۔

کمیٹی نے وضاحت کی کہ رئیل اسٹیٹ کی جانچ کا کام 4 سرکاری اداروں کے 6 ارکان پر مشتمل آزاد کمیٹیوں کے ذریعے کیا گیا، جن میں وزارت داخلہ، میونسپل اور دیہی امور اور ہاؤسنگ، فنانس، اور جنرل اتھارٹی برائے اسٹیٹ رئیل اسٹیٹ شامل ہیں۔ ان کے علاوہ کچی آبادیوں سے دو افراد کا انتخاب کیا گیا۔ ہر کچی آبادی کا الگ الگ سروے کیا گیا۔ اس دوران اراضی کی قیمت اور اس پر بنی عمارتوں کی الگ الگ قیمتیں لگائی گئیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں