ریاض میں پنجروں میں قید 3 شیرضبط ، مالک گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب میں نیشنل سینٹر فار وائلڈ لائف ڈویلپمنٹ کی ایک ٹیم نے اسپیشل فورسز فار انوائرمنٹل سیکیورٹی کے تعاون سے ریاض میں پنجروں میں قید تین شیر قبضے میں لینے کے بعد ان کے مالکان کے خلاف رپورٹ درج کر کے کارروائی شروع کردی گئی ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ شیروں کو پکڑنا جنگلی حیات اور ماحولیاتی نظام کی خلاف ورزی تصور کیا جاتا ہے۔

ٹیم نے شیروں کو کنٹرول کرنے اور اُنہیں بے ہوشی کرنے بعد اپنی تحویل میں لیتے ہوئے جنگی حیات کے لیے مختص مرکزمیں منتقل کر دیا ہے۔

اسپیشل فورسز برائے ماحولیاتی تحفظ نے کہا ہے کہ شہری نے جو کچھ کیا وہ ماحولیاتی نظام اور فنگل جانداروں اور ان کی مصنوعات کی اسمگلنگ اور انتظامی ضوابط کی خلاف ورزی ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ خلاف ورزی کرنے والے کے خلاف قانونی طریقہ کارکے مطابق کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

حکام کا کہنا ہے کہ خطرے سے دوچار جنگلی حیات کو قبضے میں لینا قابل سزا جرم ہے اور اس جرم کے ارتکاب پر 30 ملین ریال تک اور 10 سال تک قید یا ان دو سزائیں دی جا سکتی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں