سنبلی خطاطی کوآرٹ میں متعارف کرانے والی سعودی آرٹسٹ سے ملیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کی فائن آرٹ کی ماہر ندیٰ الشدوخی کو بچپن ہی سے فنون لطیفہ کا شوق تھا اور اس نے نہ صرف آرٹ میں خود مہارت حاصل کی بلکہ سنبلی آرٹ کو ایک نئی شکل میں متعارف کرایا۔ ندیٰ اس فن کو سیکھنے کے خواہشمندوں کے لیے اپنی صلاحیتوں کو سونے کی تھیلی میں پیش کرتی ہیں۔ انہوں نے خطاطی کے شعبے کو فائن آرٹ کی دُنیا میں متعارف کرانے میں اہم کردار ادا کیا اور سنبلی آرٹ سے فن پارے تیار کیے۔

اس مقصد کے لیے انہوں نے ٹیکنیکل اینڈ ووکیشنل ٹریننگ کارپوریشن کی جانب سے سند حاصل کی اور اس فن کو ایک نئی جہت سے روشناس کیا۔

’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ سے بات کرتے ہوئے ندیٰ نے کہا کہ اُنہیں بچپن سے ہی آرٹ کا شوق تھا کیونکہ وہ اپنے والد کی طرف سے تحفے میں ہمیشہ ڈرائنگ ٹولز کا انتخاب کرتی تھیں اور جب یہ ٹولزانہیں دستیاب ہوئے تو تربیت اور مشق سے انہوں نے اپنی آرٹ کی صلاحیتوں کو نکھارا۔ ندیٰ نے تدریسی نصاب کے لیے ایک ایسی کتاب تیار کی جس پر سنبلی خطاطی سے خاکے بنائے گئےتھے۔

ندیٰ کو سنبلی خطاطی اور فائن آڑٹ کی پینٹنگ کے امتزاج کے حوالے سے ممتازدرجہ حاصل ہے۔انہوں نے پینٹنگز کو ایک خاص نقوش کی شکل میں پیش کیا جس نے انہیں دوسرے مصوروں سے ممتاز کردیا۔

ان کا کہنا تھا کہ میں اپنی پینٹنگز کو ایک مخصوص توازن اور تال کے ساتھ رکھنے کا عزم رکھتی ہوں۔ اس کے بعد پیٹنگ کے لیے رنگوں کا انتخاب کرتی ہواور یہ دیکھتی ہوں کہ پینٹنگ میں یہ رنگ کس حد تک زیادہ موزوں ثابت ہوسکتے ہیں۔

سعودی عرب میں فن اور فنکاروں کی حقیقت کے بارے میں ندیٰ الشدوخی نے کہا کہ مملکت وژن 2030 کی بدولت آرٹ اور ثقافتی تحریک کی حالت کا تجربہ کر رہی ہے۔ آرٹسٹٹ اپنی دلچسپی کی چیزیں پیش کررہےہیں اور حکومت کی طرف سے آرٹ کو سرپرستی اور پذیرائی مل رہی ہے۔

جہاں تک تربیتی پروگراموں کا تعلق ہے ندیٰ نے وضاحت کی کہ انہوں نے ڈرائنگ اور رنگ کاری کی بنیادی باتوں پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے نوجوانوں اور بوڑھوں کے لیے بہت سے آرٹ کورسز پیش کیے ہیں۔ ندیٰ نے نوجوانوں کی رہ نمائی کے لیے یوٹیوب پر چینل کھول کر اس آرٹ کو مزید فروغ دینے کی کوشش کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں