غرب اردن میں اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے فلسطینی نوجوان شہید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مقبوضہ مغربی کنارے میں اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے سنیچر کے روز ایک فلسطینی شہید ہو گیا۔

اسرائیلی فوج کے مطابق فلسطینی نوجوان غرب اردن کے علاقے میں گاڑیوں پر پتھراؤ کر رہا ہے، صہیونی فوجیوں نے اسے ایسا کرنے سے روکا لیکن وہ باز نہ آیا، جس پر اسے گولی مار دی گئی۔
فلسطینی حکام نے شہید ہونے والے نوجوان محمد حماد عمر سولہ برس بتائی ہے۔

صہیونی فوجی کا دعوی ہے کہ رام اللہ کے قریب واقع مرکزی شاہراہ کو چند ’’مشتبہ‘‘ نوجوانوں نے بڑے پتھر رکھ کر بلاک کر دیا تھا جس سے وہاں سے گذرنے والی گاڑیوں کے مسافروں اور ڈرائیوروں کی زندگی خطرے میں تھی۔

موقع پر موجود اسرائیلی فوجی اہلکاروں نے طے شدہ طریقہ کار کے مطابق نوجوانوں کو ایسا کرنے سے روکنے کے لیے ہوائی فائرنگ کی۔

جائے حادثہ کے قریب واقع سلواد قصبے کے میئر نے بتایا کہ اہل علاقہ نے نوجوان کی شہادت کے خلاف علاقے میں ہڑتال کر دی ہے جس میں اسرائیلی فوج کے ہاتھوں فلسطینی نوجوان کی شہادت پر احتجاج کیا جا رہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں