سعودی سپریم کورٹ کی جانب سے مسلمانوں کو ذو الحجہ کا چاند دیکھنے کی اپیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کی عدالت عظمیٰ نے مملکت میں رہنے والے فرزندان توحید کو ہدایت کی ہے کہ بدھ کے روز ذو الحجہ کا چاند دیکھیں تاکہ رویت کا مرحلہ ہو سکے۔

سرکاری نیوز ایجنسی ’’ایس پی اے‘‘ کے مطابق سپریم کورٹ نے چاند دیکھنے کی صورت میں اپنی گواہی کا اندراج کرانے کی ہدایت کی ہے۔

سپریم کورٹ نے اعلامیہ میں کہا ہے کہ ’ام القری کلینڈر کے مطابق یکم ذو القعدہ منگل 31 مئی کو تھا مگر رویت ہلال ثابت نہ ہونے کے باعث مذکورہ دن کو شوال کا 30 واں دن قرار دیا گیا تھا اور بدھ یکم جون کو ذو القعدہ کی پہلی تاریخ قرار دی گئی تھی‘۔

۰۹
۰۹

’اس بنا پر سپریم کورٹ عوام الناس سے اپیل کرتی ہے کہ چونکہ رویت کی بنا پر بدھ 29 جون ذو القعدہ کی 29 ویں تاریخ ہے جبکہ ام القری کلینڈر کے مطابق یہ 30 ذو القعدہ ہے لہذا مذکورہ دن میں چاند دیکھنے کی کوشش کی جائے گی‘۔

سپریم کورٹ نے کہا ہے کہ ’رویت ہلال کی مقامی کمیٹیوں کے علاوہ دلچسپی لینے والے افراد رویت کے مقامات میں چاند دیکھنے کی کوشش کریں اور جسے بھی چاند نظر آجائے تو اپنی گواہی کا اندراج کرائے‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں