شامی خانہ جنگی میں تین لاکھ سے زائد عام شہری ہلاک ہوئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ادارے کے مطابق دس سالہ شامی خانہ جنگی میں کم از کم تین لاکھ چھ ہزار عام شہری مارے جا چکے ہیں۔

یہ تعداد گزشتہ لگائے گئے اندازوں سے زیادہ بنتی ہے۔ ان اعداد و شمار کے مطابق خانہ جنگی کے دس برسوں میں یومیہ اسی سے زائد عام شہری ہلاک ہوئے۔

قبل ازیں اقوام متحدہ نے کہا تھا کہ شامی خانہ جنگی میں مجموعی طور پر ساڑھے تین لاکھ ہلاکتیں ہوئی ہیں اور ان میں عام شہریوں کی تعداد تقریبا ایک لاکھ چالیس ہزار بنتی ہے۔

اقوام متحدہ کی طرف سے جاری کردہ اس تازہ رپورٹ میں تصادم کے دوران ہلاک ہونے والے فوجیوں یا عسکریت پسندوں کی تعداد شامل نہیں ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں