.

اسرائیلی فوج غزہ نے غزہ پر چڑھائی سخت کر دی، 25,000 ریزرو فوجی طلب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل نے مغربی غزہ میں "اسلامی جہاد" کے متعدد ٹھکانوں پر تازہ بمباری کی ہےجب کہ اسرائیلی فوج نے اعلان کیا ہے کہ اس سے تعلق رکھنے والے خصوصی دستوں اور توپ خانے نے "اسلامی جہاد" تحریک کے فوجی پوائنٹس پر جمعہ کو بمباری کے بعد غزہ سے تعلق رکھنے والے اہداف کو نشانہ بنایا۔ ان حملوں میں اسرائیلی فوج نے اسلامی جہاد کے ایک اہم رہ نما کو ہلاک کرنے کا بھی دعویٰ کیا ہے۔

العربیہ اور الحدث کے نامہ نگار نے اطلاع دی ہے کہ اسرائیلی گولہ باری کے نتیجے میں شجاعیہ محلے میں بچوں سمیت 5 افراد زخمی ہوئے۔

ادھر اسرائیلی فوج کے ترجمان اویچائی ادرعی نے کہا ہے کہ چیف آف اسٹاف نے فوج کو ہنگامی حالت میں رہنے اور چیف آف اسٹاف کے اعلیٰ آپریشن روم کو کھولنے کی ہدایت کی۔

دریں اثناء العربیہ کے نمائندے نے اطلاع دی ہے کہ اسرائیلی فوج نے غزہ میں بڑھتی ہوئی کشیدگی کے باعث 25000 ریزروسٹ بلانے کا فیصلہ کیا ہے۔

اسرائیلی فوج نے انکشاف کیا تھا کہ اس نے جمعہ کو غزہ پر کیے گئے فضائی حملوں میں 15 افراد کو ہلاک کیا ہے۔ قابض فوج کا کہنا ہے ان کا آپریشن ختم نہیں ہوا ہے۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان رچرڈ ہیچٹ نے میڈیا کو بتایا کہ "ہمارے جائزے کے مطابق آپریشن میں 15 افراد مارے گئے۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ آپریشن "ابھی ختم نہیں ہوا ہے۔ اسے تحریک کے ایک سینیر رہ نما پر "قبل از وقت حملہ" قرار دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں