عاشورہ کے روزے کے دوران افطاری سے قبل تین دوست حادثے میں چل بسے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کے علاقے الھدیٰ میں واقع پراسرار سیاحتی مقام’دنیا کے کنارے‘ نامی گڑھے کے قریب تین دوست ایک حادثے کے دوران اس وقت چل بسے جب وہ عاشورہ کےدن روزے کی حالت میں تھے اور افطار کے لیے وہاں جا رہے تھے۔

تینوں دوست عاشورہ کے روز "Edge of the World" کی بلندی پر پہنچے جہاں انہیں معلوم نہیں تھا کہ یہ ان کی زندگی کا آخری وقت ثابت ہوگا۔

حادثے میں فوت ہونے والے ایک نوجوان کے رشتہ دار وجدی سیف القائد نے ’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کو بتایا کہ ان کے چچا عاصم اور ان کے دو دوست حامد العقبہ اور ہاشم السروری جو آپس میں گہرے دوست تھے اس گڑھے میں گر کر چل بسے۔ وہ تینوں ایک ہی کار میں وہاں پر پہنچے تھے۔

انہوں نے وضاحت کی کہ تینوں دوست عاشورہ کے موقع پر باہر نکلنے اور ہدیٰ میں افطار کرنے کی غرض سے گڑھے کے کنارے پر جا رہے تھے کہ ان کی گاڑی الٹ گئی اور وہ روزے کی حالت میں فوت ہوگئے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس خوفناک خبر کو سننے کے بعد خاندان صدمے سے دوچار ہوگئے۔ خاندان کے بعض افراد کو سوشل میڈیا کے ذریعے پتا چلا۔

وجدی نے کہا کہ میرے چچا کی موت سے پہلے کی حرکتوں نے خاندان کو خبردار کیا کہ وہ ہمیں الوداع کہہ رہے ہیں۔" عاصم اپنی بیوی اور تین بیٹیوں کو سیر کے لیے لے گئے اور انہیں ہر طرح سے خوش کرنے کی کوشش کی۔

طائف گورنری میں شہری دفاع نے اعلان کیا کہ الہدیٰ میں ایک پہاڑی ڈھلوان سے گاڑی گرنے سے ہلاک ہونے والے 3 افراد کی لاشیں نکال لی گئی ہیں۔

یہ حادثہ چند روز قبل پیش آیا تھا جس کی اطلاع سول ڈیفنس کے آپریشنز روم کو دی گئی، جہاں پر ٹیمیں فوری طور پر جائے حادثہ پر گئیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں