سعودی عرب میں افریقی باشندے کو منی لانڈرنگ کے کیس میں سزا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے پبلک پراسیکیوشن نے ایک افریقی باشندے کو پانچ ہزار ریال اور دو لاکھ 97 ہزار ڈالر کی خطیر رقم غیرقانونی طور پر بیرون ملک لے جانے کے الزام میں دو سال قید کی سزا سنائی ہے۔ سزاپوری ہونے کے بعد ملزم کو ملک بدر کردیا جائے گا اور اس کے قبضے سے برآمد کی گئی رقم بھی ضبط کرلی گئی ہے۔

پراسیکیوشن کے ایک ذریعے نے بتایا کہ افریقی باشندے کو سعودی عرب کے شاہ عبدالعزیز بین الاقوامی ہوائی اڈے سے کھجوروں کے کریٹ بیرون ملک جاتے اس وقت گرفتار کیا گیا تھا جب تلاشی کے دوران پتا چلا تھا کہ کھجور کی پٹیوں میں رقم رکھی گئی ہے۔

گرفتاری کے بعد ملزم کے خلاف غیرقانونی طور پر کیش بیرون ملک اسمگل کرنے کی کوشش کے تحت مقدمہ چلایا گیا اور جرم ثابت ہونے پر ملزم کو سزا سنائی گئی ہے۔

پبلک پراسیکیوشن نے پہلے معیشت اور ملکی پیداوار کے تحفظ کے لیے کئی اقدامات کیے ہیں۔ سعودی حکومت نے رقوم کی بیرون ملک غیرقانونی ترسیل روکنے کے لیے ٹھوس اقدامات کیے ہیں۔

سعودی عرب میں بیرون ملک سفر کے دوران 60 ہزار سے زاید کی رقوم کے بارے میں مجاز حکام کو اس کی قانونی حیثیت کے بارے میں مطلع کرنا ضروری ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں