لبنانی فوجی کا بیوی پر بدترین تشدد، واقعے کی ویڈیو وائرل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پرگذشتہ چند گھنٹوں میں لبنان سے ایک ویڈیو وائرل ہوئی ہےجس میں ایک فوجی کو اپنی بیوی پر بدترین تشدد کرتے دیکھا جا سکتا ہے۔

دوسری طرف سماجی اور عوامی حلقوں میں اس واقعے پر شدید غم وغصہ پایا جا رہا ہے۔ شہریوں نے تشدد کے مرتکب شخص کے خلاف سخت قانونی کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ خاتون گھٹنوں کے بل دیوار کی طرف منہ کرکے بیٹھی ہوئی اور اس نے ہاتھ اوپر اٹھا رکھے ہیں۔ اس دوران اس کا شوہر جو ایک فوجی بتایا جاتا ہے آتا ہے اور مار پیٹ شروع کردیتا ہے۔

پتا چلا ہے کہ یہ کلپ شمالی لبنان کے علاقے میں فلمایا گیا تھا جہاں اس خاتون کو ان کے شوہر نے تشدد کا نشانہ بنایا۔ یہ شخص لبنان میں داخلی سکیورٹی فورسز سے تعلق رکھتا ہے اور ایک فوجی ہے۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ فیس بک پراس حوالے سے ملنے والی معلومات سے پتا چلا ہے کہ سفاک شوہر پہلے بھی بیوی کو بدترین تشدد کا نشانہ بنا چکا ہے۔ تشدد سے تنگ آ کرخاتون نے کئی بار خود کشی کی بھی کوشش کی۔

دوسری طرف عوامی حلقوں نے اس واقعے پر شدید غم وغصے کا اظہار کرتے ہوئے تشدد کے مرتکب شخص کے خلاف سخت قانونی کارروائی کا مطالبہ کیا جا رہا ہے۔

کچھ لوگوں نے داخلی سلامتی سے بھی اپیل کی کہ وہ ان لوگوں کو روکیں جو اس معاملے کو کامیاب کرنے کی کوشش کرتے ہیں اور لڑکی کے حامیوں کو خاموش کرتے ہیں ، اور خواتین کے حقوق کے دفاع سے متعلق سیکیورٹی فورسز اور سول سوسائٹیوں کی جنرل ڈائریکٹوریٹ کی طرف جاتے ہیں ، اور ان سے مداخلت کرنے کا مطالبہ کرتے ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ حالیہ اعدادوشمار داخلی سکیورٹی فورسز کے جاری کردہ سال 2019 سے تعلق رکھتے ہیں میں انکشاف کیا گیا ہے کہ ہاٹ لائن پر خواتین کے خلاف تشدد کی اطلاع دہندگی کی شرح 100 سے 180 فیصد کے درمیان ہے۔

اور ان نمبروں میں دلچسپی رکھنے والے جن کو یہ سمجھا جاتا ہے کہ وہ بہت خطرناک ہیں۔ بہت سے ایسے کیسز بھی ہیں جن کی رپورٹ درج نہیں کی جاتی۔

مقبول خبریں اہم خبریں