لبنان میں قتل اور خود کشی کے واقعات میں رواں سال اضافہ، عورتوں پر تشدد بھی بڑھ گیا

چوری اور کار چوری کے واقعات میں کمی ، سرکاری اعداد و شمار کی بنیاد پر رپورٹ میں انکشاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

لبنان میں رواں سال کے دوران قتل اور خود کشی کے واقعات میں اضافے کا رجحان سامنے آیا ہے۔ سرکاری ذرائع کی مدد سے مرتب کی گئی ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 2022 کے دوران اب تک قتل کے واقعات میں 18 فیصد جبکہ خود کشی کے واقعات میں 8 فیصد اضافہ ہو چکا ہے۔

یہ اعداد و شمار بیروت میں کام کرنے والے ایک ریسرچ سنٹر ' انفارمیشن انٹر نیشنل ' نامی ادارے نے لبنان کی اندرونی سلامتی سے متعلق فورسز کے ڈائریکٹوریٹ کے اعدادو شمار کی بنیاد پر اپنی مرتبہ رپورٹ میں کیا ہے۔ تاہم چوری کی وارداتوں میں ساڑھے چھ فیصد اور کار چوری کے واقعات میں چھ فیصد کمی دیکھی گئی ہے۔

واضح رہے پچھلے سال چوری کے واقعات میں اضافہ ہو گیا تھا، اس اضافے کی وجہ ملک میں معاشی بحران ایک بڑا سبب تھا۔ انفارمیشن سنٹر کی رپورٹ کے مطابق اس معاشی بحران کی وجہ سے کار چوری میں 212 فیصد کا اضافہ ہوا تھا۔ جبکہ چوری کے دیگر واقعات میں مجموعی طور پر گذشتہ سال اضافہ 266 فیصد ہو گیا تھا۔

انفارمیشن سنٹر کے مطابق اب کے برس 2019 کے سال کے دس ماہ کے مقابلے میں 101 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ اس رپورٹ کے مطابق 2021 کے مقابلے میں اب تک کے دس مہینوں میں 68 فیصد اضافہ ہوا ہے جبکہ ماہ جولائی کے مقابلے میں پچھلے جولائی میں خود کشی کے واقعات میں 42 فیصد اضافہ ہوا۔

اس رپورٹ میں ایک دلچسپ بات لبنان کے بارے میں امریکی کمپنی گیلپ کی طرف سے یہ بتائی گئی ہے کہ دنیا کے سو ملکوں کے بارے میں لیے گئے اس جائزے میں لبنان سب سے زیادہ ناراض ملک ثابت ہوا ہے۔ سب سے زیادہ رنجیدہ ملک ہے اور بہت زیادہ دباو میں بھی یہی ملک ہے۔

صنفی امتیاز کی بنیاد پر تشدد

لبنان کی غیر حکومتی تنظیموں آباد اور کافا نے العربیہ انگلش کو بتایا کہ پچھلے ماہ صنفی امتیاز کی بنیاد پر تشدد میں اضافہ ہوا ہے۔ یہ صورت حال کووڈ 19 کے لاک ڈاون کے دنوں سے شروع ہو گئی تھی۔ اسی طرح لبنانی بندر گاہ پر 2020 میں ہونے والے خوفناک دھماکے نے بھی لبنانی معاشرے کو بہت کئی قسم کے مسائل سے دوچار کیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق لبنانی کرنسی کی قدر میں کمی ، بے روزگاری، بڑی تعداد میں نقل مکانی ہوئی ہے ۔ لیکن حکومت ان مسائل کے خاتمے لے لیے کوئی خاص مدد نہیں دی ہے۔ اسی طرح خواتین کے خلاف جرائم میں ایک اہم واقعہ یہ رپورٹ ہوا ہے کہ جس میں ایک حاملہ خاتون کو ان کے شوہر نے اسقاط حمل سے انکار کی وجہ سے جلا دیا تھا۔ اسی آگ سے جھلسنے کے بعد اس خاتون کی موت واقع ہو گئی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں