ایران کے ساتھ معاہدے سے ملیشیاؤں کو 250 ارب ڈالر ملیں گے: اسرائیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی وزیر دفاع بینی گینٹز نے منگل کوکہا ہے اسرائیل ایران کے ساتھ جوہری معاہدے پر اثر انداز ہونے کے لیے اپنی طاقت سے ہر ممکن کوشش کرے گا۔ امریکی صدرجو بائیڈن کی انتظامیہ کو خبردار کیا ہے کہ ایران کے ساتھ معاہدہ ملیشیاؤں کو 250 ارب ڈالر کی منتقلی کی اجازت دے گا۔

اخبار "ٹائمز آف اسرائیل" کے مطابق انہوں نے مزید کہا کہ اسرائیل امریکا اور خطے کے ممالک کے ساتھ مذاکرات کے سلسلے میں رابطے میں ہے جس کا مقصد تہران اور عالمی طاقتوں کے درمیان 2015 کے جوہری معاہدے کو بحال کرنا ہے۔

"ہم پارٹی نہیں بنیں گے"

اخبار کے مطابق انہوں نے زور دے کر کہا کہ تل ابیب "کسی بھی معاہدے کا فریق نہیں بنے گا۔"

اسرائیلی انتباہ ایک ایسے وقت میں آیا ہے جب امریکی قومی سلامتی کونسل نے تصدیق کی ہے کہ تہران نے حساس فائلوں میں رعایتیں دی ہیں۔

تاہم مشرق اور مغرب کی جانب سے آنے والے بیانات کے باوجود ایک امریکی اہلکار کے مطابق نئے جوہری معاہدے تک پہنچنے کے امکان کو لے کر اب بھی غیر یقینی صورتحال موجود ہے۔

اس اہلکار نے معاملے کی حساسیت کے پیش نظر اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ واشنگٹن اور تہران کے درمیان ابھی بھی کچھ خلا موجود ہے۔

مجوزہ متن کی منظوری

یورپی یونین کے خارجہ پالیسی کے سربراہ جوزپ بوریل نےکہا ہے کہ جوہری مذاکرات میں حصہ لینے والے بیشتر ممالک نے یورپی متن یا تجویز سے اتفاق کیا ہے۔

جوزپ بوریل
جوزپ بوریل

اسپانوی ٹیلی ویژن کے ساتھ ایک انٹرویو میں انہوں نے مزید کہا کہ ان میں سے اکثر متفق ہیں، لیکن میرے پاس ابھی تک امریکا کی طرف سے کوئی ردعمل نہیں ہے، جس کی میں اس ہفتے کے دوران توقع کرتا ہوں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں