ایرانی ملیشیا کے ٹھکانوں پر اسرائیلی حملے میں شامی افسرہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سیریئن آبزرویٹری برائے انسانی حقوق نے کارکنوں کے حوالے سے بتایا کہ جمعرات کی شام مغربی حماۃ کے دیہی علاقوں میں مصیاف کے نواح میں گوداموں پر اسرائیلی حملوں کے نتیجے میں شامی حکومتی فورسز کا ایک افسر ہلاک ہوگیا۔

العربیہ اور الحدث ٹی وی کے ذرائع نے بتایا کہ اسرائیلی حملے میں کل شام میں ایرانی میزائلوں کی تیاری اور انہیں اپ ڈیٹ کرنے مقامات کو نشانہ بنایا گیا۔

دریں اثناء فائر فائٹنگ ٹیمیں اور حکومتی فورسز کے ارکان نے گذشتہ رات مصیاف کے علاقے کے جنگلات میں لگنے والی آگ کو بجھانے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے، جس کے نتیجے میں گولہ بارود کے ٹارگٹ ڈپووں سے دھماکوں کے ٹکڑے گرے ہیں جس کے نتیجے میں تباہی پھیل گئی۔ شامی حکومت کے جنگی طیاروں نے ناہموار پہاڑی مقامات پر آگ بجھانے کے آپریشن میں حصہ لیا اور آگ پر قابو پا لیا۔

سیریئن آبزرویٹری نے بتایا کہ ایران کے وفادار ملیشیا کے میزائل ڈپو میں ہونے والے دھماکوں کے نتیجے میں 14 شہری زخمی ہوئے۔

گوداموں میں تقریباً 6 گھنٹے کے دوران اسرائیلی گولہ باری کے بعد علاقے میں یکے بعد دیگرے دھماکوں کی آوازیں سنائی دی گئیں۔ دھماکے اور شیلنگ سے شہریوں کے گھروں اور اطراف میں موجود املاک کو مادی نقصان پہنچا۔

آگ بجھانے والی ٹیموں نے آگ پر قابو پانے کی کارروائی میں حصہ لیا اور فوجی اور سویلین ایمبولینسوں نے زخمیوں کو اسپتال منتقل کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں