اسرائیل:حماس کی معاونت پرعالمی وژن غزہ کے سابق سربراہ کو12سال قیدکی سزا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

اسرائیل میں ایک عدالت نے منگل کے روز امریکا میں قائم ایک بڑی امدادی ایجنسی کے غزہ میں سابق سربراہ کو فلسطینی جماعت حماس کو لاکھوں ڈالر دینے کے الزام میں 12 سال قید کی سزا سنائی ہے۔

اسرائیل کے جنوبی شہربئرالسبع (بئرالشبع) کی ضلعی عدالت نے ورلڈ ویژن کے سابق سربراہ محمد الحلبی کو12 سال قید کی سزاسنائی ہے۔ان کی حراست کی مدت بھی اس شامل ہوگی۔ وہ گذشتہ چھے سال سے عدالتی کارروائی کے دوران میں جیل میں قید رہے ہیں۔

اسرائیلی عدالت نے جون میں ان کے خلاف فیصلہ جاری کیا تھا مگر انھیں اب قید کی سزاسنائی گئی ہے۔انھیں غزہ کی حکمران حماس کو لاکھوں ڈالر اور ٹنوں اسٹیل خردبرد کے ذریعے مہیا کرنے کا قصور وار قراردیا گیا تھا۔

محمد الحلبی کو جون 2016 میں گرفتار کیا گیا تھا اور اسی سال اگست میں ان کے خلاف فردِ جرم عاید کی گئی تھی مگر انھوں نے کسی بھی بے ضابطگی میں ملوث ہونے کی تردید کی تھی۔عدالت کے فیصلے کے بعد ان کے وکیل نے کہا کہ حلبی اس تمام معاملے میں بے گناہ ہیں۔

ماہر حنہ نے کہا کہ ان کےموکل بے گناہ ہیں۔انھوں نے کچھ نہیں کیا اور ان کے خلاف کوئی ثبوت نہیں ہے۔اس کے برعکس انھوں نے عدالت میں کسی معقول شک سے بالاتر ثابت کیا کہ انھوں نے اس بات کو یقینی بنایا تھا کہ حماس کو براہ راست کوئی رقم نہیں دی جائے گی۔

حنہ نے کہا کہ وہ اس فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل کریں گے۔واضح رہے کہ حلبی کوایک عسکریت پسند گروپ حماس کی رُکنیت اور دہشت گردانہ سرگرمیوں کی مالی معاونت اور ’’دشمن کو معلومات پہنچانے‘‘کے ساتھ ساتھ ہتھیاررکھنے کابھی مجرم قراردیا گیا تھا۔

الحلبی کے خلاف زیادہ ترشواہدخفیہ رکھے گئے تھے۔ان میں اسرائیل نے ’’سکیورٹی خدشات‘‘ کا حوالہ دیا تھا جس کے نتیجے میں ان کے وکلاء کی ٹیم نے فیصلے کی قانونی حیثیت پرسوال اٹھایا تھا۔

الحلبی کی گرفتاری کے بعد ورلڈ وژن کی ایک بڑی عطیہ دہندہ آسٹریلوی حکومت نے غزہ کی پٹی میں منصوبوں کے لیے مالی اعانت منجمد کرنے کا اعلان کیا تھا۔اس کے بعد آسٹریلوی حکومت کی تحقیقات میں بھی غبن کا کوئی ثبوت نہیں ملا تھا۔

ورلڈ وژن امریکامیں قائم ایک عیسائی خیراتی ادارہ ہے۔اس کے عالمی سطح پرقریباً 40,000 ملازمین ہیں۔یہ دنیا کی سب سے بڑی غیرسرکاری تنظیموں میں سے ایک ہونے کا دعویٰ کرتا ہے۔اس کی امدادی سرگرمیوں میں بچّوں پربالخصوص توجہ مرکوز کی جاتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں