بغداد میں سکون ہونے کے بعد ایران عراق سرحد دوبارہ کھل گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ایران نے ایک روز پہلے عراق کے ساتھ بند کی گئی اپنی سرحد دوبارہ کھول دی ہے۔ تہران نے ایران عراق سرحد کو کھولنے کا فیصلہ عراق کے شیعہ عالم مقتدیٰ الصدر کی طرف سے منگل کے روز اپنے حامیوں کو سڑکوں سے واپس آجانے کی ہدایت کیے جانے کے بعد کیا ہے۔

ایک روز قبل جب مقتدیٰ الصدر نے خود کو سیاست سے الگ کرنے کا اعلان کیا تھا تو ان کے حامیوں اور مخالفین کے درمیان جھڑپیں شروع ہوگئی تھیں۔ جن میں اب تک درجنوں ہلاک وزخمی ہو چکے ہیں۔ ایران نے اس صورت حال کے پیش نظر فوری طور پر عراق کے ساتھ سرحد بند کرنے کے علاوہ فضائی رابطے بھی بند کر دیے تھے۔

واضح رہے لاکھوں ایرانی عراق کے شہر کربلا جاتے ہیں۔ یہ ایک سالانہ سرگرمی ہے ۔ ایرانی شہریہ محرم میں نواسہ رسول صلی اللہ علیہ وسلم کی یاد میں کوشش کرتے ہیں کہ چہلم کے دن عراق ہی میں گزاریں۔ رواں سال چہلم امام حسین رضی اللہ تعالیٰ عنہ 16 اور 17 ستمبر کو ہو گا۔

منگل کے روز ایران عراق سرحد کھل گئی ہے۔ اس امر کی تصدیق ایران کے سرکاری ٹی وی نے بھی تصدیق کر دی ہے۔ کیونکہ عراق میں کل کے مقابلے میں صورت حال پر سکون ہو گئی ہے۔ اس سے قبل اسی ایرانی ٹی وی نے اعلان کیا تھا کہ ایران نے عراق کے لیے اپنی پروازیں بھی غیر معینہ مدت کے لیے معطل کر دی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں