’’ہارٹ آف جدہ‘‘ میں عالمی منزل بنانے کے لیے تعمیراتی کام شروع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے پبلک انویسٹمنٹ فنڈ کی ملکیتی سنٹرل جدہ ڈویلپمنٹ کمپنی نے "ہارٹ آف جدہ" میں ایک عالمی منزل بنانے کے لیے تعمیراتی کام شروع کر دیا ہے جو کہ پائیدار قدرتی اجزاء اور جدید نظاموں اور ٹیکنالوجیز کا استعمال کرتے ہوئے قابل تجدید توانائی پر مبنی منصوبوں کے ذریعے زندگی کے ساتھ دوڑتا ہے۔

سینٹرل جدہ ڈویلپمنٹ نے اس منصوبے کے لیے تعمیراتی کام شروع کرنے کی خاطرایک معاہدے پر بھی دستخط کیے، جو جدہ کے قلب میں السلام پیلس اور برائن ڈی سیلینیشن پلانٹ کے درمیان ایک اسٹریٹجک مقام پر واقع ہے۔

سعودی پریس ایجنسی "ایس پی اے" کے مطابق اس معاہدے میں بنیادی ڈھانچے اور اس میں سمندری کاموں پر عمل درآمد، عمارتوں اور موجودہ انفراسٹرکچر کو ہٹانا، پہلے مرحلے میں تقریباً 400 عمارتوں کو ہٹانا اور بنیادی ڈھانچے کی سروسزکی دوبارہ روٹنگ شامل ہے۔ جس میں بجلی کے گراؤنڈ کی تنصیبات، سیوریج کے پائپ اور پانی کی سپلائی شامل ہے جن کی کل لمبائی 6.5 کلومیٹر ہے۔

سنٹرل جدہ ڈویلپمنٹ کمپنی نے بتایا کہ ریکلیمیشن اور آف شور ڈرلنگ ہوگی۔ پھر ڈرلنگ آؤٹ پٹ کے ساتھ بیک فلنگ ہوگی، جس کی مقدار 4 ملین کیوبک میٹر بتائی گئی ہے۔ پھر بحالی کا کام، مٹی کی خصوصیات کو بہتر بنانا اور بہترین انجینئرنگ کا استعمال کرتے ہوئے اسے متوقع تعمیراتی کاموں کے لیے تیار کرنا۔ فٹ پاتھوں کی تعمیر کے علاوہ 1.5 ملین فلیٹ میٹر کے کل رقبے کی تیاری،2.5 کلومیٹر کی لمبائی کے ساتھ میرین اور یاٹ میرینز اور مرینا کے اندر تیرتی برتھیں، 1.5 کی لمبائی والی واٹر فرنٹ برتھوں پر تعمیراتی کاموں کا نفاذ شامل ہے۔

کمپنی کا مزید کہنا ہے کہ "ڈاؤن ٹاؤن جدہ" پروجیکٹ 3 اہم مراحل میں تیار کیا جائے گا۔ اس میں واٹر فرنٹ جس کی لمبائی 9.5 کلومیٹر ہے بھی رکھا گیا ہے۔ اس منصوبے میں مملکت کے اندر اور باہر سے کشتیاں حاصل کرنے کے لیے تیار کردہ عالمی معیار کا مرینا اور 2.1 کلومیٹر لمبا ریتیلا ساحل شامل ہے، جو وژن 2030 کے اہداف کے مطابق ہوگا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں