سعودی بحریہ نے خلیج عمان میں منشیات کی ایک بڑی کھیپ پکڑ لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کمبائنڈ میری ٹائم ملٹری ڈیوٹی فورس (CTF 150) جس کی قیادت اس وقت رائل سعودی نیول فورسز کر رہی ہے نے خلیج عمان میں USS Glenn Harris کے ذریعے ایک کشتی کو روکنے اور تلاشی کی کارروائی کی۔ تلاشی کی کارروائی کے دوران کشتی سے 3,330 کلو گرام چرس اور ہیروئن برآمد ہوئی جس کی مالیت 20 ملین ڈالر ہے۔

رائل سعودی نیول فورسز کمانڈ نے پہلی بار برطانوی رائل نیوی سے 30 جولائی 2018 کو یہ کام سنبھالا۔

پہلا آپریشن اکتوبر 2020 میں کیا گیا تھا جس میں 450 کلو گرام سے زیادہ امیتھمفیٹامائن جسے "کرسٹل میتھ" کہا جاتا ہے ضبط کیا گیا تھا۔ اس کی تخمینہ مالیت 100 ملین ڈالر سے زیادہ ہے۔

نومبر 2020 میں دو آپریشن کیے گئے۔ پہلے میں 1,579 کلو گرام چرس لے جانے والی ایک کشتی کو روکا گیا جس کی مالیت 8 ملین ڈالرسے زیادہ تھی۔

دوسری کارروائی میں ڈیوٹی فورس نے ایک کشتی کو روکا اور 30 ملین ڈالر سے زائد مالیت کی 364 کلو گرام ہیروئن کے علاوہ 456 کلو گرام منشیات "کرسٹل میتھ" کو ضبط کی۔113 ملین سے زائد تھی۔ دسمبر 2020 میں دو آپریشن کیے گئے، پہلے آپریشن میں 910 کلو گرام چرس پکڑی گئی، جب کہ فورس نے روک کر ضبط کر لیا۔ دوسری کارروائی میں بین الاقوامی پانیوں میں 272 کلو گرام ہیروئن کے علاوہ 182 کلو گرام امیتھم فیٹامائن برآمد کی گئی۔

کمبائنڈ میری ٹائم ڈیوٹی فورس میں قائم کی گئی تھی۔ اسے چار ڈیوٹی فورسز میں سے ایک سمجھا جاتا ہے۔ سعودی عرب میں ڈیوٹی فورس (CTF-151)، ڈیوٹی فورس (CTF-152) ڈیوٹی فورس اور ڈیوٹی فورس( CTF-153) ہیں۔

یہ چاروں افواج بحرین میں امریکی پانچویں بحری بیڑے میں کمبائنڈ میری ٹائم فورسز (سی ایم ایف) کی کمان کے تحت کام کرتی ہیں۔ یہ دنیا کی سب سے بڑی بین الاقوامی میری ٹائم شراکت داری ہے اور اس کے کاموں کا مقصد آپریشن کے بڑے علاقوں میں میری ٹائم سکیورٹی آپریشنز کو نافذ کرنا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں