سعودی عرب میں انار کی سالانہ پیداوار 30 ہزار ٹن سے تجاوز کر گئی

مملکت انار کی پیداوار میں خود کفالت کی راہ پر گامزن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعوی عرب انار کی پیداوار میں خود کفالت کی راہ پر گامزن ہے۔ مملکت میں ہر سال تیس ہزار ٹن سے زاید انار پیدا ہوتا ہے جو مملکت میں انار کی 34 فی صد ضرورت پوری کرتا ہے۔

سعودی عرب کی وزارت ماحولیات، پانی اور زراعت کی جانب سے جاری کردہ ایک رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ مملکت سالانہ 30.1 ہزار ٹن سے زیادہ انار کا پھل پیدا کرتی ہے، جو کہ 34 فیصد سے زیادہ کی ضرورت کے لیے کافی سمجھی جا رہی ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ انار کی پیداوار کا سیزن جولائی سے دسمبر تک ہوتا ہے اور انار ان فصلوں میں سے ایک امید افزا فصل ہے جو توجہ کا مرکز ہے۔ مملکت میں انار کی سب سےزیادہ کاشت الباحہ، القصیم، عسیر، الجوف اور مکہ مکرمہ کے علاقوں میں کی جاتی ہے، اس کے علاوہ اس کی پیداوار باقی علاقوں میں بھی ہوتی ہے مگر وہ زیادہ نہیں۔

سعودی پریس ایجنسی "ایس پی اے" کے مطابق وزارت زراعت کی جانب سے زرعی مصنوعات کے بارے میں معلومات پھیلانے، موسمی پھلوں کے مختلف آپشنز کے بارے میں آگاہی اور کارکردگی کو بڑھانے کے لیے شروع کی گئی "اِس ٹائم" مہم کے ایک حصے کے طور پر جاری کردہ رپورٹ میں مقامی کاشتکاروں کی مدد اور ان کے مالی منافع کے تناسب کو بڑھانے کے لیے مقامی مارکیٹنگ کا مربوط نظام ہے۔

انار کی پیداوار
انار کی پیداوار

سعودی عرب میں 1,587 ہیکٹر زیادہ رقبے پر انار کے پھل دار پودے موجود ہیں۔ سعودی عرب میں کئی اقسام کے انار کاشت کیے جاتے ہیں۔ ان میں زیادہ مشہور طائفی انار، ونڈر فل، شامی انار، کھٹا انار، بلدی انار اور خب الجمیل جیسی اقسام زیادہ مشہور ہیں۔

انہوں نے وضاحت کی کہ انار کے پھل میں صحت اور غذائیت کے بے شمار فوائد ہیں۔ یہ جسم میں چربی کو جلانے کو تحریک دیتا ہے، جلد کی صحت کو برقرار رکھتا ہے۔ ذہنی طاقت کو بہتر بناتا ہے، نظام انہضام کی صحت کو برقرار رکھتا ہے اور کولیسٹرول کو کم کرنے میں کردار ادا کرتا ہے۔ طبی تحقیقات سے پتا چلا ہے کہ انار وٹامنز، معدنیات سے بھرپور پھلوں میں سے ایک ہے۔

انار میں اینٹی آکسیڈنٹس مواد موجود ہوتا ہے۔ انار کے چھلکے کے استعمال کے بھی کئی فوائد ہیں۔ یہ دل اور شریانوں کی حفاظت کو برقرار رکھنے میں مفید سمجھا جاتا ہے۔

انار کے پودوں کو کم پانی والی زمین پربھی کاشت کیا جا سکتا ہے۔ انار کے ایک درخت کی عمر پچاس سال تک ہوتی ہے۔ سعودی عرب میں انار کی مقبولیت اور اس کی کاشت کا اندازہ اس امر سے لگایا جا سکتا ہے کہ مملکت میں انار میلے بھی منعقد کیے جاتے ہیں۔ انار کے پھلوں سے سعودی عرب کے کسان اچھا خاصا منافع حاصل کرتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں