سعودی عرب میں بھی گرانی کی بازگشت سنائی دینے لگی

اشیائے خورو نوش کی قیمتوں اور ٹرانسپورٹ کے اخراجات میں اضافہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب میں اشیائے خورو نوش اور ٹرانسپورت کے اخراجات میں پچھلے سال کے مقابلے میں تین فیصد اضافہ ہو گیا ہے۔ یہ اضافہ ماہ اگست کے دوران ہوا ہے۔ اس بارے میں سرکاری طور پر اعداد وشمار جاری کیے گئے ہیں۔

ماہ جولائی میں یہ اضافہ دو اعشاریہ سات فیصد تھا۔ اعداد وشمار میں بتایا گیا ہے کہ خوارک، مشروبات کی قیمتوں اور ٹرانسپورٹ کے کرائے اس اضافے کا اہم سبب بنے ہیں۔ کیونکہ ماہ اگست کے دوران یہی تین شعبے بنیادی طور پر افراط زر کا ذریعہ بنے ہیں۔

اعداد وشمار مرتب کرنے والے شعبے کے مطابق اشیائے خورو نوش اور ٹرانسپورٹ میں کے اخراجات میں چار فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق گوشت کی قیمتوں میں چھ اعشاریہ سات فیصد اضافہ ہوا ہے۔ اس وجہ سے خوراک اور مشروبات کا اضافہ صارفین تک پہنچتے پہنچتے اٹھارہ اعشاریہ آٹھ فیصد تک چلا گیا۔ اگست کے دوران قیمتوں میں اضافہ 0،4 فیصد تھا۔

یہ معمولی طور پر ماہ جولائی کے مقابلے میں مختلف رہا۔ کہ جولائی میں یہ اضافہ 0،5 فیصد تھا۔ لیکن ماہانہ سی پی آئی خوراک اور ٹرانسپورٹ کی وجہ سے 0،8 فیصد کو چھونے لگا۔ سب سے زیادہ اضافے کا رجحان کھانے پینے سے متعلق اشیا میں آیا، یہ 0،9 فیصد تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں