سعودی عرب اسلامی دنیا کا اہم ترین ملک ہے:انڈونیشی عالم دین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے وزیر اسلامی امور ، دعوت وارشاد الشیخ ڈاکٹر عبد الطیف بن عبد العزیز آل الشیخ نے قزاقستان کے دورے کے دوران دارالحکومت نورسلطان میں علما اور اسلامی اسکالرزکی سب سے بڑی جماعت کے سربراہ اور ممتاز انڈنیشی عالم دین الشیخ یحییٰ خلیل تتوقف سے ملاقات کی۔ اس ملاقات میں انڈونیشیا کے ممتاز عالم دین نے اسلامی دنیا میں سعودی عرب کی خدمات کو سراہا۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب مسلم دنیا کا اہم ترین ملک ہے۔

ملاقات کے دوران علما کی بڑی تعداد موجود تھی۔

یہ ملاقات بین المذاہب کانفرنس کے موقعے پرہوئی۔ کانفرنس میں دنیا کے 60 ممالک سے تعلق رکھنے والے ،مختلف مذاہب کے 100 اسکالرز نے شرکت کی۔

کانفرنس میں وزارت اسلامی امور ، اسکالرز ایسوسی ایشن کی نشاۃ ثانیہ اور قازقستان میں جمہوریہ انڈونیشیا کے سفیر کے علاوہ سعودی عرب اور دیگر مسلمان ملکوں کے علما نے خطاب کیا۔ کانفرنس میں دنیا میں قیام امن اور بقائے باہمی کے لیے علما اور مذہبی شخصیات کے کردار پر بات کی گئی۔ مسلمان علما نے کانفرنس کے دوران اسلام کے اعتدال پسندانہ طرز فکر، امن وآشتی کی خواہش اور انتہا پسندی کی مخالفت میں کھل کربات کی۔

انہوں نے کا کہ اسلام امن وآشتی کا دین ہے جو ہرطرح کے تشدد اور انتہا پسندی کو مسترد کرتا ہے۔

سعودی عرب کے وزیرمذہبی امور نے کانفرنس سے خطاب میں خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی عالمی امن کے لیے کی جانے والی کاوشوں پر روشنی ڈالی۔

عبدالطیف آل الشیخ نے کہا کہ سعودی عرب بھی دہشت گردی اور انتہا پسندی کا شکار رہا ہے۔ مملکت نے مذہبی انتہا پسندی کا پوری قوت کے ساتھ مقابلہ کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں