شیخ محمد بن زاید نے اسرائیلی صدر کو دورے کی باضابطہ دعوت دے دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

متحدہ عرب امارات کے صدر شیخ محمد بن زاید نے اسرائیلی صدر اضحاک حر زوگ کو دورہ امارات کے سرکاری دورے کی دعوت دی ہے۔ یہ دعوت ایسے موقع پرسامنے آئی ہے جب اسرائیل اور امارات کے درمیان تعاقات کے قائم ہوئے دوسال مکمل ہو گئے ہیں اور اماراتی وزیر خارجہ اسرائیل کے دورے پر ہیں۔

سرکاری خبر رساں ادارے کے مطابق شیخ محمد بن زاید نے اسرائیلی صدر کو اماراتی خلائی تقریب کے سلسلے کیں دعوت دی ہے۔ یہ تقریب ماہ دسمبر میں متوقع ہے۔

اس خلائی پروگرام کے سلسلے کی تقریب میں خلائی شعبے اور صنعت سے تعلق رکھنے والے ماہرین پوری دنیا سے شرکت کریں گے۔ اس موقع پر یہ ماہرین بین الاقوامی سطح پر خلائی منصوبوں اور پالیسیوں کی تشکیل پر تبادلہ خیال کریں گے۔

اماراتی صدر نے اس سے پہلے ستمبر کے اوائل میں اپنے ایک ٹویٹ کے ذریعے خلائی سائنس سے متعلق بتایا تھا۔ اسرائیل میں اماراتی وزیر خارجہ کے دورے کے دوران دونوں طرف کے حکام مختلف موضوعات پر تبدلہ خیال کررہے ہیں۔

ان میں خطے کے امن و استحکام کے لیے مشترکہ حکمت عملی کے علاوہ فوڈ سکیورٹی ، معیشت اور سرمایہ کاری کے شعبوں میں تعاون بڑھانے کے امور بھی شامل ہیں۔ یہ معاہدہ ابراہم کے تحت 2020 میں قائم ہونے والے تعلقات کے بعد ایک اہم ملاقات ہے۔ معاہدہ ابراہم نے دونوں ملکوں کے درمیان تعاون و تعلقات کے نئے افق کھول دیے ہیں۔
اسرائیل امارات بزنس کونسل کی شریک بانی اور یروشلم کی ڈپٹی مئیر فیلور حسن ناحوم نے دوطرفہ تعلقات کے دو برسوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا امارات اور اسرائیل کے درمیان تیز ترین کاروباری شراکت داری دیکھنے میں آئی ہے۔ یہ تجارتی حجم اگلے بارہ ماہ کے دوران دوگنا ہو جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں