ایرانی سپریم لیڈر سخت علیل، ڈاکٹروں کی کڑی نگرانی جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای بیماری کے سنگین شکل اختیار کر جانے کے بعد سرجری کے مرحلے سے گذارے جا رہے ہیں۔ لیکن اس بارے میں کسی ایرانی ذریعے یا سرکاری ذرائع نے ابھی تک کوئی اطلاع دی ہے نہ پریس ریلیز جاری کیا ہے۔

اس سے پہلے نیو یارک ٹائمز نے جمعہ کے روز رپورٹ کیا تھا کہ ایرانی سپریم لیڈر صحت کی خرابی کی وجہ سے بیڈ ریسٹ پر ہیں اور ڈاکٹر انہیں دیکھ رہے ہیں۔ نیو یارک ٹائمز نے یہ مختصر اور ابتدائی نوعیت کی خبر آیت اللہ خامنہ ای کے قریبی ذرائع کے حوالے سے دی تھی۔

ان کے بارے میں میڈیا رپورٹس میں یہ بھی کہا گیا ہے ان کی تمام میٹنگز منسوخ کر دی گئی ہیں۔ جبکہ سوشل میڈیا میں ان کے حوالے سے مختلف قسم کی مثبت اور منفی افواہیں زیر گردش ہیں۔

رواں ماہ کے آغاز میں ایران انٹر نیشنل نے رپورٹ کیا تھا کہ ایرانی سپریم لیڈر کی پبلک کے سامنے کی ؐمصروفیات تقریبا ختم ہو جانے کی وجہ سے وہ منظر سے غائب ہیں۔

نیز اپنی صحت کے مسائل کی وجہ سے انہیں جوہری پروگرام کے حوالے سے ایرانی صدر رئیسی کو اختیارات منتقل کر دیے ہیں۔ تاہم سرکاری طور پر ان خبروں کی تردید یا تصدیق نہیں کی گئی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں