دو طالبعلموں میں گھونسوں کے تبادلے نے ایک کو ہسپتال پہنچا دیا

سعودی عرب میں "جازان ایجوکیشن" سکول کے کلاس روم میں جھگڑا ہوا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں دو طالب علموں کے درمیان جھگڑے اور باہمی گھونسوں کے تبادلہ کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی اور جنگل میں آگ کی طرح پھیل گئی۔ لڑای میں ایک طالب علم زمین پر گر کر زخمی ہوگیا اور اسے ہسپتال لے جایا گیا۔ جازان کے محکمہ تعلیم کے ترجمان ’’ رجاء العطاس‘‘ نے بتایا کہ واقعہ وسط جازان میں ایجوکیشن آفس کے تحت آنے والے بوائز سکینڈری سکول میں پیش آیا۔

سکول انتظامیہ نے ایک بیان میں کہا جازان کے ڈائریکٹر جنرل آف ایجوکیشن نے فوری کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت کردی ہے۔ یہ کمیٹی واقعہ کی وجوہات اور تفصیلات کو ظاہر کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ ڈائریکٹر جنرل نے لاپرواہی برتنے والی کسی بھی پارٹی کے احتساب کی بات کی ہے۔ انہوں نے معاملہ کو مطلوبہ طریقہ کار کے ساتھ نمٹانے کا کہا اور زور دیا کہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ کہ ایسا دوبارہ نہ ہو۔

رجاء العطاس نے بتایا کہ طالب علم کا ہسپتال میں طبی معائنہ کیا گیا اور اس کی مسلسل دیکھ بھال کے بعد اسے گھر روانہ کردیا گیا۔

کلاس روم میں دو طالب علموں کے اس جھگڑے کی اس ویڈیو کو ایک سوشل مڈیا پر سرگرم کارکن نے وائرل کیا۔

ایک طالبعلم نے اپنے دو ساتھیوں کے اس جھگڑے کی ویڈیو بنا لی تھی۔ ویڈیو بنانے والے طالبعلم نے ساتھیوں کا جھگڑا ختم کرنے کی کوشش کے بجائے ویڈیو بنانے کو ترجیح دی۔

ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک طالب علم زمین پر گر گیا اور بے حرکت پڑا ہے۔ پھر اسے طبی عملہ اپنے کندھوں پر اٹھا کر لے جا رہا ہے۔

ایک ٹویٹ میں تبصرہ کرنے والے نے کہا کہ سب سے بڑا صدمہ اس چیز کا ہے کہ استاد کلاس روم میں موجود ہیں اور اسے دیکھ رہا ہے۔ دوسری بات یہ ہے کہ ان طالبعلم کے پاس موبائل فون موجود ہے کیا سکول میں موبائل فون استعمال کرنا ممنوع نہیں ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں